Monday - 2018 Dec 10
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 183282
Published : 3/9/2016 11:57

جناب فاطمہ زھرا سلام اللہ علیھا سے حضرت علی علیہ السلام کی شادی

پیغمبر اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی دختر نیک اختر کی شادی اسلام میں وہ پھلی ائیڈیل شادی تھی کہ جو تمام امت مسلمہ کے لئے نمونہ عمل کی حیثیت رکھتی ہے۔

جنگ بدر میں مسلمانوں کی کامیابی کے بعد دوسرا مبارک واقعہ جو خانہ حضرت محمد صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم میں رونما ھوا ، وہ حضرت علی علیہ السلام  کی شادی تھی جو آنحضرت صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی دختر نیک اختر،حضرت فاطمہ زھرا  سلام اللہ علیھاسے ھوئی۔(١)
حضرت فاطمہ زھرا سلام اللہ علیھا، پیغمبر اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم   کے خاص اکرام و احترام کے لحاظ سے اور اپنی لیاقت اور ممتاز شخصیت و فضیلت کے اعتبار سے ایسی خاتون تھیں جن کے متعدد لوگ خواستگار تھے۔ پیغمبر اسلام صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم  کے چند معروف اصحاب، جن میں بعض سرمایہ دار بھی تھے، ان سے شادی کرنا چاہتے تھے، لیکن پیغمبر صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے موافقت نہیں کی(٢) اور فرمایا:میں خدا کے فیصلہ کا منتظر ہوں،(٣) انھوں نے حضرت علی علیہ السلام  کو مشورہ دیا کہ فاطمہ سلام اللہ علیھا کی خواستگاری کے لئے جائیں۔
پیغمبر صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم  نے جناب فاطمہ سلام اللہ علیھاکی رائے معلوم کرنے کے بعد علی علیہ السلام کی خواستگاری کی موافقت کردی۔(٤) اور اپنی بیٹی سے فرمایا:میں تم کو ایسے شخص کی زوجیت میں دے رھا ھوں جو سب سے نیک اور اسلام لانے میں پیش قدم تھا،اور علی علیہ السلام سے بھی فرمایا:قریش کے کچھ لوگ ھم سے نالاں ہیں کہ کیوں اپنی دختر انھیں نھیں دی، میں نے ان کے جواب میں کہا: یہ کام خدا کے ارادہ سے ھوا ہے، فاطمہ کی ہمسری کے لئے علی کے علاوہ کوئی دوسرا شائستگی اور لیاقت نھیں رکھتا ہے۔
یہ شادی نھایت ھی سادگی اور خوشحالی کے ساتھ تھوڑے سے مھر اور مختصر سے جھیز کے ساتھ انجام پائی جو اسلام میں ازدواجی روابط کے لئے معنوی قدر و قیمت کے اعتبار سے اعلیٰ ترین نمونہ سمجھی جاتی ہے۔
______________________
١۔  مجلسی، بحارالانوار، ج٤٣، ص ٩٧
٢۔  مجلسی، گزشتہ حوالہ، ١٠٨؛ ابن واضح، تاریخ یعقوبی، ج٢، ص ٣٤.
٣۔  ابن سعد، طبقات الکبریٰ، (بیروت: دار صادر)، ج٨، ص١٩.
٤۔  مجلسی، گزشتہ حوالہ، ص ٩٣.


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2018 Dec 10