Tuesday - 2018 Sep 18
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 183302
Published : 5/9/2016 0:29

غیبت امام (ع) کا فلسفہ کیا ہے؟

بعض لوگ یہ خیال کرتے ہیں کہ جب امام زمانہ(ؑج)پردہ غیبت میں ہیں تو ھم ان کے وجود مبارک سے کیسے بھرہ مند ھوسکتے ہیں۔

سوال:غیبت امام (ع) کا فلسفہ کیا ہے؟ جبکہ ھم ان کے وجود پر نور سے فائدہ نہ اٹھاپائیں؟
جواب:قرآن کے سورہ بقرہ میں ارشاد ھوتا ہے:«الم ذلک الکتاب لايب فيہ ھدي للمتقين الذين يومنون بالغيب»يعني  یہ وہ کتاب ہے کہ جس کے کتاب الھي ھونے ميں کوئي شک نھيں ،يہ ان پرھيزگاروں کے لئے رھنما ہے جو غيب پر ايمان رکھتےہيں۔
خداوند عالم کے اس فرمان کے بعد ھر مسلمان کے لئے غيب پر ايمان لانے کي اھميت ظاھر ہے اور عقل بھي يھي کھتي ہے کہ بندوں کو  اپني زندگي ميں غيب کي باتوں کا اقرار کئے بغير کوئی چارہ نھيں ہے، يھي وجہ ہے کہ لامذہب شخص کو بھي اس کا قائل ھونا پڑتا ہے اور مذہب والے خدا  کو  مانتے ہيں ، وہ بلاتامل ايک ايسي طاقت کے سامنے سر جھکاتے ہيں جو  نہ کسي کے مشاہدے ميں آئي اورنہ آ سکتي ہے -
خدا کي نشانياں نظرآتي ہيں مگر وہ خود نظر نھيں آتا پھر قيامت پر،حساب و کتاب پر، بھشت و دوزخ پر، بغیر ديکھے ايمان لانا ضروري ہے پس ايسي تمام غيبي چيزوں پر ايمان رکھنے والے ھر منصف مزاج کو پس و پيش نھيں ہوسکتا جن کي موجودگي کي سينکڑوں دليليں موجود ہيں -
موجودات عالم ميں غيبت کے دو طريقہ ہيں،ايک يہ کہ و ہ چيزيں نظرہي نہ آتي ہوں جيسے کہ جنت يااصحاب کھف وغیرہ،اور دوسري صورت يہ ہے کہ وہ غائب ذاتيں نظرتو آتي ہيں مگران کي پھچان نھيں ھوتي جيسے کہ جنات يا حضرت خضر یا حضرت الياس علیھما السلام وغيرہ ،بس يھي صورت حضرت حجت عليہ السلام کي بھی ہے کہ لوگ حضرت کو دیکھتے ہيں ليکن پھچانتے نہيں،اور اس غيبت کا صرف يہ مطلب ہے کہ امام زمانہ(عج) در پردہ منصب امامت کي ذمہ داري انجام دے رہے ہيں، جنت در پردہ موجود ہے مگر نہ اس کي نعمتيں ھم تک آتي ہيں نہ ہم اس دنیا میں رھتے ھوئے ان تک پھنچ سکتے ہيں پھر بھي کوئي عاقل اس وقت ،اس کے وجود کو بے فائدہ نھيں کہہ سکتا اس لئے کہ اس کے تذکرے اطاعت الھي کي طرف متوجہ کرتے ہيں لھذا جب غيبت ميں جنت کا وجود مفيد ہے توکم ازکم اسي طرح غيبت امام زمانہ(عج) کا وجود مفيد ہے، خدا کي بنائي ھوئي جنت کو اس وقت لوگ نھيں ديکھتے ليکن اس کے بنائے ہوئے امام وحجت کوپھلے بھي ديکھا گيا اوراب بھي خوش قسمت صاحبان زيارت سے مشرف ہوتے ہيں-
تبیان نیٹ


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Tuesday - 2018 Sep 18