Saturday - 2018 Oct. 20
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 183688
Published : 8/10/2016 13:3

امریکی ایوان نمائندگان اور ایران دشمنی

امریکی ایوان نمائندگان کے متعدد ممبران نے ایران مخالف اپنی پالیسیوں کو جاری رکھتے ہوئے اوباما انتظامیہ سے کہا ہے کہ وہ«W T O»میں ایران کی شمولیت کی تجویز کی مخالفت کرے۔


ولایت پورٹل:
امریکی ایوان نمائندگان میں ڈیموکریٹک اور ریپبلیکن پارٹی کے چار ارکان نے اوباما انتظامیہ سے کہا ہے کہ وہ«W T O»ں ایران کی شمولیت کی مخالفت کرے، ان ارکان کا کہنا ہے کہ اس عالمی تنظیم میں ایران کی شمولیت سے تہران  کے خلاف امریکی پابندیوں کے اثرات کم ہوجائیں گے،امریکی ایوان نمائندگان کے ان ارکان نے اوباما انتظامیہ سے کہاہے کہ وہ ایران کو تجارت کی عالمی تنظیم«W T O » میں شامل ہونے سے روکے،واضح رہے کہ گذشتہ برس جولائی میں ایران اور پانچ جمع ایک گروپ کے درمیان ہونے والے معاہدے کے بعد عمان اور سوئیزرلینڈ جیسے کئی ملکوں نے یہ تجویزدی تھی کہ ایران کو بھی تجارت کی عالمی تنظیم میں شامل کرنے کے لئے ایک خصوصی کمیٹی تشکیل دی جائے۔
اس درمیان وال اسٹریٹ جرنال نے خبردی ہے کہ امریکا کے بعض حلقوں کے ساتھ ساتھ  سعودی عرب بھی «W T O»میں ایران کی شمولیت کی مخالفت کررہاہے۔
یہاں یہ بات قابل ذکرہے کہ امریکی کانگریس پر صہیونی لابی کا زبردست اثر ورسوخ ہے اور اس کے زیادہ تر فیصلے جو ایران کے خلاف ہوتے ہیں وہ صیہونی لابی کے ہی دباؤ میں ہوتے ہیں اور پچھلے کچھ عرصے سے ایران کے خلاف سرگرمصہیونی لابی میں سعودی عرب بھی شامل ہوگیا ہے۔
سحر



آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Saturday - 2018 Oct. 20