Thursday - 2018 مئی 24
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 183750
Published : 13/10/2016 16:20

اسیران کربلا کے متعلق رہبر انقلاب کا نظریہ:

خاندان نبوت کی اسیری،تاریخ کا سب سے تلخ اور دردناک واقعہ

ان عزیزوں کو ایسے لوگوں نے اپنا قیدی بنایا تھا کہ جن کے اندر انسانیت نام کی کوئی چیز نہیں پائی جاتی تھی اور نہ ہی انہیں اسلام سے کوئی سروکار تھا،اس کے ساتھ ہی وہ اپنے دور کے سب سے بدطینت اور پلید و خبیث لوگ تھے۔

ولایت پورٹل:
آپ حضرات یہ جانتے ہیں کہ محرم کی گیارہویں تاریخ کو تاریخ اسلام میں بہت ہی بڑا اور دردناک حادثہ وقوع پذیر ہوا،یہ ایک ایسی اسارت اور قید و بند کی کاروائی انجام پائی کہ جس کی مثال کسی قوم اور تاریخ اسلام میں اب تک دیکھی نہیں گئی اور نہ ہی اس سے بڑی کبھی دیکھنے میں آئے گی،ایسے لوگوں کو اسیر کیا گیا جو کہ خاندان وحی و نبوت سے تعلق رکھتے تھے اور تاریخ اسلام کے عزیز ترین اور شریف ترین لوگ شمار کئے جاتے تھے،خواتین کو قیدی بنا کر بازاروں اور گلی کوچوں میں گھمایا گیا یہ وہ خواتین تھیں کہ جن کی شان و منزلت اس وقت کے اسلامی معاشرے میں بے مثال تھی،ان عزیزوں کو ایسے لوگوں نے اپنا قیدی بنایا تھا کہ جن کے اندر انسانیت نام کی کوئی چیز نہیں پائی جاتی تھی اور نہ ہی انہیں اسلام سے کوئی سروکار تھا،اس کے ساتھ ہی وہ اپنے دور کے سب سے بدطینت اور پلید و خبیث لوگ تھے۔
گیارہویں محرم کو پیغمبر اکرم(ص) و علی بن ابی طالب علیہم السلام کے گھرانے کے افراد کو قیدی بنایا گیا جو کہ ہمارے لئے اب تک ہے اور اب سے لے کرابد تک ایک دردناک المیہ کی حیثیت سے بطور یادگار دلوں میں باقی رہے گا۔(1)
(1) شہیدوں اور ایثار کرنے والے افراد کے اہل خانہ کے ایک گروہ سے ملاقات میں خطاب۔ 14 اگست 1989 عیسوی



آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Thursday - 2018 مئی 24