Friday - 2019 January 18
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 183845
Published : 19/10/2016 17:33

زیارت عاشورا کی اہمیت کی وجہ کیا ہے اور اس کے فوائد کیا ہیں؟

زیارت ایک طرح سے اپنے موقف کا اعلان اور خط فکری کی تعیین کا نام ہے اور اس کے حد درجہ تعمیری آثار مرتب ہوتے ہیں ،لہٰذا متن زیارت کے عنوان سے جو کچھ پڑھا جاتا ہے وہ مفہوم اور جہت دینے کے اعتبار سے خاص حساسیت و نزاکت سے معمور ہے ، اسی لئے ائمہ (ع)نے اپنے اصحاب کو طریقۂ زیارت کی تعلیم دے کر اس تعمیری عمل کو جہت اور زیادہ منزلت بخشی ہے

ولایت پورٹل:
امام حسین علیہ السلام کی زیارت سے متعلق روایات بہت ہیں(۱)   اور معروف زیارت عاشورا کے سلسلہ میں امام باقر اور امام صادق علیہما السلام سے متعدد احادیث نقل ہوئی ہیں(۲)  امام باقرعلیہ السلام نے یہ زیارت اپنے ایک صحابی «بنام علقمہ بن محمد حضری» کو تعلیم دی۔
چونکہ زیارت ایک طرح سے اپنے موقف کا اعلان اور خط فکری کی تعیین کا نام ہے اور اس کے حد درجہ تعمیری آثار مرتب ہوتے ہیں ،لہٰذا متن زیارت کے عنوان سے جو کچھ پڑھا جاتا ہے وہ مفہوم اور جہت دینے کے اعتبار سے خاص حساسیت و نزاکت سے معمور ہے ، اسی لئے ائمہ (ع)نے اپنے اصحاب کو طریقۂ زیارت کی تعلیم دے کر اس تعمیری عمل کو جہت اور زیادہ منزلت بخشی ہے  اس طرح کہ معصومین(ع) سے منقول زیارت نامے (جیسے زیارت جامعۂ کبیرہ ، زیارت عاشورا  زیارت آل یاسین ، زیارت ناحیۂ مقدسہ ) ان کے بلند تعلیمات و درس آموز حکمت کا گنجینہ ہیں  زیارت عاشورا (جسے امام باقر علیہ السلام نے تعلیم فرمایا ہے ) فردی و اجتماعی لحاظ سے تعمیری آثار  شیعوں کے فکری و عقیدتی موقف کی وضاحت اور خط انحراف کی نشاندہی کے باعث خاص اہمیت کی حامل ہے، اس زیارت کے کچھ آثار وبرکات درج ذیل ہیں:
۱۔اہل بیت عصمت کے ساتھ معنوی رابطہ کی برقراری اور ان کے تئیں عقیدت و محبت کا استحکام ،یہ محبت باعث بنتی ہے کہ زائر ین ان حضرات(ع) کو اپنا اسوہ قرار دیں اور ان کے ساتھ فکری و عملی یکسوئی حاصل ہونے کی خاطر کوشش کریں ، جیسا کہ زیارت کے ایک حصہ میں زائر خدا سے چاہتا ہے کہ اس کی زندگی و موت کو یکسر ان حضرات (ع)کے مانند قرار دے «اَللّٰھُمَّ اِنِّیْ اَتَقَرَّبُ اِلَیْکَ بِالْمُوَالَاۃِ لِنَبِیِّکَ وَآلِ نَبِیِّکَ»۔
۲۔زائر کے اندر ظلم سے مقابلہ کرنے کا جذبہ پیدا ہونا
اس زیارت میں ظالموں پر لعنت و نفرین کی تکرار موجب بنتی ہے کہ زائر کے اندر ظلم سے لڑنے کا جذبہ پیدا ہو، وہ ظالموں سے نفرت و برائت کا اظہار اور پیروان حق و دوستان اہل بیت (ع)سے محبت کا اعلان کرکے اپنے دین کی ایمانی بنیادوں کو مستحکم کرتے ، اور ایمان تو راہ خدا میں حب و بغض کے سوا کچھ اور ہے ہی نہیں «ھَلِ الْاِیْمَانُ اِلَّاالْحُبُّ وَالْبُغْضُ » حقیقی مومن ظلم کے مقابل خاموش نہیں ہوسکتا ،ظالم سے کھلے طور پر نفرت و بیزاری رکھتا ہے اور مظلوم اور محاذ حق کے ساتھ اپنی ہمراہی کا اعلان کرتا ہے« یَااَبَاعَبْدِاللّٰہِ اِنِّی سِلْمٌ لِمَنْ سَالَمَکُمْ وَحَرْبٌ لِمَنْ حَارَبَکُمْ»۔
۳۔خط انحراف سے دوری اختیار کرنا
اس زیارت میں ظلم کی بنیادوں کو نشانہ بنایاگیا ہے:«فَلَعَنَ اللّٰہُ اُمَّۃً اَسَّسَتْ اَسَاسَ الظُّلْمِ وَالْجَوْرِعَلَیْکُمْ اَہْلَ الْبَیْتِ وَلَعَنَ اللّٰہُ اُمَّۃً دَفَعَتْکُمْ عَنْ مَقَامِکُمْ وَاَزَالَتْکُمْ عَنْ مَرَاتِبِکُمُ الَّتِیْ رَتَّبَکُمُ اللّٰہُ فِیْہَا»وہ ظلم جوروز عاشورا انجام دیا گیا تاریخ کے قلب میں سرایت کئے ہوئے ہے یہ ظلم و ستم کی ان کڑیوں میں سے ایک ایسی کڑی ہے جو خلافت کے صحیح راستے سے انحراف کرنے کے نتیجہ میں شروع ہوا۔
۴۔معرفت اوردرس عبرت حاصل کرنا اور اسوہ ہائے ہدایت کونمونہ قرار دینا
اس زیارت میں آیا ہے«فَاَسْئَلُ اللّٰہَ الَّذِیْ اَکْرَمَنِیْ بِمَعْرِفَۃِ اَوْلِیَائِکُمْ وَرَزَقَنِی الْبَرَائَۃَ مِنْ اَعْدَائِکُمْ اَنْ یَجْعَلَنِیْ مَعَکُمْ فِی الدُّنْیَا وَالْآخِرَۃِ وَاَنْ یُثَبِّتَ لِیْ عِنْدَکُمْ قَدَمَ صِدْقٍ فِی الدُّنْیَا وَالْآخِرَۃِ»۔
زائر، حق کی معرفت حاصل کرنے ، ظلم و ظالم کی شناخت کرنے اور ان سے دوری اختیار کرنے کے بعد اہلبیت عصمت (ع)کے مکتب میں قدم جمانے اور ان کی عملی پیروی کے ذریعہ خود کو سعادت دنیا و آخرت کی راہ میں قرار دیتا ہے،یعنی ہدایت کے اسووں اور نمونوں کو(جو خدا کی طرف سے مقرر کئے گئے ہیں )اپنے لئے سر مشق عمل قرار دیتاہے اور ان کے ساتھ ہمقدم ہونے کی دعا مانگتا ہے۔
۵۔راہ خدا میں شہادت طلبی اور ایثار و فداکاری کے جذبہ کوپروان چڑھانا۔
۶۔اہلبیت عصمت ؑکے مکتب فکر اور راہ و ہدف کو زندہ رکھنا۔
----------------------------------------------------------------------------------------------------------------
حوالہ جات:
۱۔ کامل الزیارات،ص۱۸۰۔
۲۔بحارالانوار،ج۱۰۱،ص:۲۹۰،اقبال الاعمال،ص:۳۸،شیخ طوسی،مصباح المتھجد،ص:۵۳۸ و۵۴۲،۵۴۷۔

 


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Friday - 2019 January 18