Monday - 2018 Dec 17
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 183965
Published : 27/10/2016 18:25

تفسیر نور الثقلین

تفسیر نور الثقلین ایک روایی تفسیر ہے اور قرآن کے صرف بعض آیات پر مشتمل ہے جس میں ان آیات سے متعلق پیغمبر اسلام(ص) اور اہل بیت اطہار(ص) کی احادیث بیان کی گئی ہے،اس میں 13422 احادیث کو ذکر کیا ہے اور اکثر احادیث کی سند بھی مذکور ہیں،مصنف نے اس کتاب میں سوائے بعض موارد کہ جہاں پر کچھ تفصیل یا بعض مطالب کو کسی اور جگہ پر منتقل ہوا ہے، منقولہ احادیث کے بارے میں اپنی طرف سے کوئی اظہار نظر نہیں کیا ہے۔


ولایت پورٹل:
تفسیر نور الثقلین ایک روایی تفسیر ہے جسے عبد علی بن جمعہ العروسی حویزی جو بارہویں صدی کے شیعہ فقہاء اور محدثین میں سے تھے، نے عربی زبان میں تالیف کی ہے، اس تفسیر میں 13422 احادیث جمع آوری کی گئی ہیں۔ یہ تفسیر چونکہ حدیث ثقلین سے الہام لیتے ہوئے قرآنی آیات(ثقل اکبر) اور احادیث معصومین(ثقل اصغر) پر مشتمل ہے، اور تمام مسلمانوں کیلئے مورد قبول واقع ہے اسلئے اس کا نام «نورالثقلین» رکھا گیا ہے۔
شیخ عبدعلی بن جمعہ عروسی ہویزی جو «ابن جمعہ» کے نام سے معروف ہیں، گیارہویں اور بارہویں صدی کے شیعہ علماء اور محدثین میں سے ہیں، آپ شہر ہویزہ خوزستان میں پیدا ہوئے اور شیراز میں زندگی گزاری، آپ نے اپنے زمانے کے اساتید بطور خاص سید نعمت اللہ جزائری شوشتری سے بہت زیادہ استفادہ کیا ہے،شیخ حر عاملی ان کے بارے میں لکھتے ہیں:«آپ ایک فاضل، فقیہ، محدث، معتمد، پارسا، ادیب، شاعر و جامع علوم و فنون عالم دین تھے»۔
کتاب کی بعض خصوصیات
تفسیر نور الثقلین ایک روایی تفسیر ہے اور قرآن کے صرف بعض آیات پر مشتمل ہے جس میں ان آیات سے متعلق پیغمبر اسلام(ص) اور اہل بیت اطہار(ص) کی احادیث بیان کی گئی ہے،اس میں 13422 احادیث کو ذکر کیا ہے اور اکثر احادیث کی سند بھی مذکور ہیں،مصنف نے اس کتاب میں سوائے بعض موارد کہ جہاں پر کچھ تفصیل یا بعض مطالب کو کسی اور جگہ پر منتقل ہوا ہے، منقولہ احادیث کے بارے میں اپنی طرف سے کوئی اظہار نظر نہیں کیا ہے۔
مصنف نے کتاب کے مقدمے میں اشارہ کیا ہے کہ اس کتاب کو لکھنے کا مقصد صرف اور صرف تفسیر قرآن کے حوالے سے معصومین کی احادیث کو جمع آوری کرنا ہے،اس کے بعد مصنف فرماتے ہیں کہ اگر اس حوالے سے مذکورہ احادیث میں سے اگر کوئی حدیث شیعہ مسلمہ اعتقادات کے مخالف ذکر ہوا ہو تو مقصود اس پر عمل کرنا یا اس ضمن میں اعتقادات کا بیان نہیں تھا بلکہ مقصد صرف احادیث کو ذکر کرنا تھا تا کہ علم رجال اور حدیث کے تیز بین ماہرین ان سے آگاہی پیدا کریں اور ان میں موجود ناسازگاری کو رفع کرنے کی کوشش کریں۔
مصنف نے سورتوں اور آیات کی مناسبت سے ان کے ذیل میں انکی کی تفسیر اور توضیح پر مشتمل احادیث کو نقل کیا ہے اور اپنی طرف سے کسی قسم کی توضیح اور تفسیر یا کسی نکتے کے بیان سے پرہیز کی ہے، اس بنا پر یہ کتاب قرآن کی آیات اور ان سے متعلق معصومین کی احادیث پر مشتمل ہے اسی لئے اس کا نام «نور الثقلین» رکھا ہے۔
اس مجموعے کی عمدہ ترین خصوصیت آیات اور روایات کو جمع کرنا ہے جو بہت ساری قرآنی معارف کو سمجھنے کیلئے ایک لازمی امر ہے، اس کتاب میں مذکور روایات متعلقہ آیات کی توضیح، تفسیر، شان نزول یا ان کی اہل بیت پر انطباق کو بیان کرتی ہیں،اگرچہ الفاظ، اعراب اور قرأت وغیرہ کی توضیح بیان کرنے والی احادیث کی تعداد کم ہیں۔
اس تفسیر میں الفاظ، اعراب اورآیات کی قرائت سے متعلق کوئی بحث موجود نہیں ہے اور چونکہ قرآن کی تمام آیات کے متعلق تفسیری روایات وارد نہیں ہوئی ہیں اسلئے یہ تفسیر پورے قرآن کی تفسیر نہیں ہے۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2018 Dec 17