Monday - 2018 Sep 24
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 183976
Published : 28/10/2016 20:7

موصل میں دہشت گردوں سے ملے ترکی اور سعودی عرب کے ہتھیار

عراق کے ایک کمانڈر نے کہا ہے کہ ترکی اور سعودی عرب نے موصل میں داعش کے دہشت گردوں کے لیے ہتھیار بھیجے ہیں۔


ولایت پورٹل:
پریس ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق عراق کی عوامی رضاکار فورس الحشد الشعبی کے ایک کمانڈرعدی الخدران نے کہا ہے کہ عراقی فورسز کو موصل کے محاذ پر داعش کے دہشت گردوں سے ایسے ہتھیار ملے ہیں کہ جو سعودی عرب اور ترکی کی طرف سے بھیجے گئے ہیں۔
انھوں نے کہا کہ ہر روز خلیج فارس کےعرب ممالک کے تاجروں کی جانب سے ترکی کے راستے ہتھیار اور گاڑیاں داعش کے لیے بھیجی جا رہی ہیں۔
عدی الخدران نے مزید کہا کہ کویتی اوراماراتی تاجر ٹویوٹا گاڑیاں دہشت گرد گروہ داعش کے لیے بھیج رہے ہیں، ان کا کہنا تھا کہ ترکی داعش کو ہتھیاروں اور جنگی سازوسامان سے لیس کر رہا ہے، ترکی کے جنگی ماہرین داعش کے دہشت گردوں کو تربیت دے رہے ہیں اور ترک فوج کا توپ خانہ داعش کی پشتپناہی اور اس کے پشتیبان کا کردار ادا کر رہا ہے۔
عراق کے وزیراعظم حیدر العبادی نے بھی کہا ہے کہ ترکی علاقے میں اپنے مفادات حاصل کرنے کے درپے ہیں اور درحقیقت وہ داعشی دہشت گردوں کے خلاف جنگ نہیں کر رہا ہے۔ انھوں نے عراق کے داخلی امور میں مداخلت کے بارے میں سعودی عرب اور ترکی کو خبردار کیا اور کہا کہ یہ ممالک اپنے مفادات کے حصول کے لیے دہشت گردی کی حمایت کر رہے ہیں۔
sahartv


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2018 Sep 24