Tuesday - 2018 Dec 18
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 184063
Published : 3/11/2016 17:19

روس نیٹو کے اقدامات پر خاموش نہیں بیٹھے گا: روسی وزیر دفاع

روس کے وزیر دفاع سرگئی شویگو نے ایک بار پھر مشرقی یورپ میں نیٹو کے اقدامات کی بابت سخت خبردار کیا ہے۔

ولایت پورٹل:
روسی ذرائع کے مطابق وزیر دفاع سرگئی شویگو نے امریکہ اور نیٹو کے رکن دیگر ملکوں نے روس اور بیلاروس کی سرحدوں کے قریب حملہ آور فوجوں کی تعیناتی کا عمل تیز کر دیا ہے،روسی وزیر دفاع نے علاقے میں نیٹو کے نئے فوجی اڈے کے افتتاح کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ نیٹو، سیاسی و اقتصادی اور فوجی حربوں اور دباؤ کے ذریعے اپنی پالیسیاں دوسروں پر مسلط کرنے کی کوشش کر رہا ہے۔
سرگئی شویگو کا کہنا تھا کہ نیٹو نے روس کے خلاف کھلی انٹیلی جینس جنگ بھی شروع کر رکھی ہے،روس کے وزیر دفاع نے کہا کہ نیٹو کے اقدامات کے نتیجے میں خطے کا اسٹریٹیجک توازن درھم برھم ہو جائے گا اور روس اس کے خلاف ضروری دفاعی تدابیر اپنانے پر مجبور ہوگا۔
روسی وزیر دفاع کا یہ بیان ایسے وقت میں سامنے آیا جب روس کے صدر ولادیمیر پوتن نے ماسکو واشنگٹن ایٹمی معاہدے کو معطل کرنے کے قانون پر دستخط کر دیے ہیں۔
قابل ذکر ہے کہ ولادیمیر پوتن نے یہ مسودہ تین اکتوبر کو پارلیمنٹ کے حوالے کیا تھا،اس قانون کے مسودے میں واشنگٹن کے ساتھ ایٹمی تعلقات بحال کرنے کی کچھ شرطیں بھی پیش کی گئی ہیں جن میں  میگنیٹیسکی قانون سمیت روس پر عائد تمام پابندیوں کے خاتمے، امریکہ کی جانب سے ماسکو کو ہونے والے نقصانات کے معاوضے کی ادائیگی اور نیٹو ممالک میں امریکی فوجی تنصیبات میں کمی شامل ہے۔
سحر
 


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Tuesday - 2018 Dec 18