Thursday - 2018 Dec 13
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 184079
Published : 4/11/2016 17:43

سعودی عرب نے خود کو عالم اسلام سے جدا کرلیا ہے:سپاہ پاسداران

سپاہ پاسداران انقلاب اسلامی ایران کے شعبہ تعلقات عامہ کے انچارج بریگیڈیر رمضان شریف نے کہا ہے کہ آل سعود حکومت اب یہ دعوی نہیں کرسکتی کہ وہ مسلمانوں کی حامی و طرفدار ہے کیوں کہ اس نے خود کو عالم اسلام سے الگ تھلگ کرلیا ہے۔


ولایت پورٹل:
ارنا کی رپورٹ کے مطابق رمضان شریف نے شام ، عراق اوریمن میں بحران پیدا کرنے اور داعش سمیت دیگر تکفیری گروہوں کو وجود میں لانے میں آل سعود کے اہم کردار کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ لبنان کی تینتیس روزہ ، بائیس روزہ اور نوروزہ جنگوں میں حزب اللہ کی کامیابی کے بعد، اگر داعش دہشت گرد گروہ سعودی عرب کی حمایت سے شام کا بحران وجود میں نہ لایا ہوتا تو اب تک اسرائیل نابود ہوگیا ہوتا۔
سپاہ پاسداران انقلاب اسلامی کے شعبہ تعلقات عامہ کے انچارج بریگیڈیر رمضان شریف نے کہا سب سے بڑی خیانت جو آل سعود نے اسلام و مسلمین اور قرآن و پیغمبر اکرم(ص)سے کی ہے، وہ دہشت گردوں منجملہ داعش کی حمایت ہے۔
رمضان شریف نے کہا کہ سامراجی عناصر کی جانب سے شام میں بحران کھڑا کرنے اورعالم اسلام میں تفرقہ پھیلانے کا اصل مقصد، حریت پسند اور مزاحمتی تحریکوں کے حامی ملک کی حیثیت سے اسلامی جمہوریہ ایران کے نظام کو نقصان پہنچا تھا لیکن مزاحمت کے محور کی ہوشیاری کے سبب پانچ سال گذرجانے کے باوجود دشمن، ان تکفیری گروہوں کے توسط سے ایران کے اسلامی انقلاب کی سلامتی کے خلاف کوئی اقدام انجام نہیں دے سکا ہے۔
سحر



آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Thursday - 2018 Dec 13