Wed - 2018 Nov 21
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 184392
Published : 29/11/2016 15:29

امام رضا علیہ السلام کے کلام کی روشنی میں امام برحق کی کچھ علامتیں؟

امام حقیقی وہ ہے کہ جس کی دعائیں مستجاب ہوتی ہیں اس طرح کہ اگر وہ کسی پتھر کے لئے بھی بدعا کردے تو وہ دو ٹکڑوں میں تقسیم ہوجائے ، رسول خدا(ص) کے ہتھیار اور علی علیہ السلام کی ذوالفقار اس کے پاس ہو ، اور اس کے پاس وہ صحیفہ ہو کہ جس میں قیامت تک آنے والے اس کے شیعوں اور دشمنوں کے نام مکتوب ہوں


ولایت پورٹل:
امام رضا علیہ السلام نے فرمایا :«امام برحق کی کچھ علامتیں ہیں»۔
وہ لوگوں میں سب سے بڑا  عالم ہو، سب سے بڑا قاضی  ہو، سب سے بڑا  پرہیزگار ہو، سب سے بڑا حلیم وبردبار  ہو ،سب سے زیادہ شجاع و بہادر ہو  ، سب سے زیادہ سخی اور کریم ہو ، سب سے زیادہ اللہ کی عبادت کرتا ہو  ،ولادت ہی سے ختنہ شدہ اور طیب و طاہر  ہو ، اپنی پشت کی  جانب موجود اشیاء کواپنے سامنے موجود اشیاء کی مانند دیکھتا ہو ،  اس کا سایہ نہ ہو ، اور جب اپنی ماں کے شکم سے باہر آئے تو وہ اپنی  ہتھیلیوں کو زمین پر ٹیک کر سجدہ میں جائے اور شہادتین ( لا الہ الا اللہ محمد رسول اللہ )کو  زبان پر جاری کرے ، اس کو کبھی احتلام نہ ہو ، اسکی آنکھیں سوئے  لیکن کبھی اس کے قلب پر آثار عنودگی طاری نہ ہو ، الہام کے ذریعہ گفتگو کرتا ہو ، اس پر رسول خدا(ص) کی زرا پوری آتی ہو  اور  کسی کو بھی اس کا پیشاب اور فضلہ نظر نہ آئے  دے  چونکہ اللہ تعالیٰ نے زمین کو حکم دیا ہے کہ جو کچھ اس سے خارج ہو اس کو فوراً نگل جائے ، اس کی خوشبو مشک و عنبر سے بھی بہتر ہو ، اور وہ لوگوں پر خود ان کے نفسوں سے زیادہ حق رکھتا ہے اور ان پر ان کے باپ اور ماؤں سے زیادہ شفیق و مہربان ہوتا ہے ،خداوندعالم کی خاطر لوگوں  کے درمیان سب سے زیادہ تواضع و انکساری سے پیش آنے والا ہو ، اور جس چیز کا دوسروں کو حکم دے اس کو ان سے پہلے انجام دیتا ہو ، اور جس چیز سے لوگوں کو منع کرےخود سب سے پہلے اپنے آپ  کو اس سے بچتا ہو ، اس کی دعائیں مستجاب ہوتی ہیں اس طرح کہ اگر وہ کسی پتھر کے لئے بھی بدعا کردے تو وہ دو ٹکڑوں میں تقسیم ہوجائے ، رسول خدا(ص) کے ہتھیار اور علی علیہ السلام کی ذوالفقار اس کے پاس ہو ، اور اس کے پاس وہ صحیفہ ہو کہ جس میں قیامت تک آنے والے اس کے شیعوں اور دشمنوں  کے نام مکتوب ہوں ،اس کے پاس ایک جامعہ ہویعنی وہ صحیفہ کہ جس کی لمبائی 70 گز ہے اور جس میں تمام وہ چیزیں مکتوب ہیں کہ جن کی اولاد آدم(ع) کو ضرورت پڑتی ہے ، اس کے پاس جفر اکبر اور جفر اصغر ہوتا ہے ، بھیڑ کی کھال اور بکری کی کھال ہوتی ہے کہ جس میں تمام علوم ہوتے ہیں یہاں تک کہ خراش مارنے کی دیت ، ایک کوڑا ، نصف کوڑا اور ثلث کوڑا مارنے تک کی دیت مرقوم ہوتی ہے اور اس کے پاس مصحف حضرت زہرا سلام اللہ علیھا ہوتا ہے»۔
بحوالہ کتاب:کشف الغمۃ،مؤلف محدث جلیل القدرشیخ عیسی اربیلی



آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Wed - 2018 Nov 21