Monday - 2018 April 23
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 184838
Published : 31/12/2016 9:1

روسی صدر نے کیا امریکی اقدامات کے مقابلے میں صبر سے جواب دینے کا فیصلہ

روس کے صدر ولادیمیر پوٹین نے امریکہ کی طرف سے 35 روسی سفارتکاروں کے ملک بدر کرنے کے جواب میں امریکی سفارتکاروں کو نکالنے کے حق کو محفوظ رکھتے ہوئے کہا ہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ کی حکومت کےاقتدار میں آنےتک روس امریکی سفارتکاروں کو ملک بدر نہیں کرےگا۔

ولایت پورٹل:
روسیا الیوم کی رپورٹ کے مطابق روس کے صدر ولادیمیر پوٹین نے امریکہ کی طرف سے 35 روسی سفارتکاروں کے ملک بدر کرنے کے جواب میں امریکی سفارتکاروں کو نکالنے کے حق کو محفوظ رکھتے ہوئے کہا ہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ کی حکومت کے اقتدار میں آنے تک روس امریکی سفارتکاروں کو ملک بدر نہیں کرےگا، اطلاعات کے مطابق کریملن کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیاہے کہ روسی صدر پوٹین نے امریکہ کی جانب سے انتخابات میں مبینہ ہیکنگ کا الزام لگا کر روسی سفارتکاروں کو ملک سے نکل جانے کا حکم جاری کر دیاہے لیکن روس اس کے جواب میں کوئی ایسا اقدام نہیں کرے گا جس سے امریکی سفارتکاروں کیلئے مسائل کھڑے ہوں،روسی صدر کا کہناتھا کہ وہ نئے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی آفس سنبھالنے کے بعد پالیسی دیکھیں گے او راس کے بعد حتمی فیصلہ کریں گے۔
واضح رہے کہ اس سے پہلے روسی وزارت خارجہ نے بھی امریکہ کے 35سفارتکاروں کو ملک سے نکالنے کیلئے فہرست تیار کرکے روسی صدر کو بھیج دی تھی تاہم اب روسی صدر کابیان سامنے آ گیاہے جس کے مطابق اب کسی کو بھی نہیں نکالا جائے گا، روسی صدر نے امریکہ کی جلد بازی کا جواب صبر سے دینے کا فیصلہ کیا ہے۔
مہر



آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2018 April 23