Tuesday - 2018 Sep 18
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 184857
Published : 1/1/2017 15:34

ترکی میں2017کی شروعات ہوئی خون کی ہولی سے

ترکی کے شہر استنبول میں سال نو کا جشن منانے والوں کے خون کی ہولی کھیلی گئی ،دہشت گردوں نے نائٹ کلب میں گھس کر 35 افراد کو ہلاک اور 46 کو زخمی کردیے۔

ولایت پورٹل:عینی شاہدین اور ترک میڈیا کا کہنا ہے کہ کلب میں دہشت گردی کے واقعے میں 3 حملہ آور شامل تھے جو سانتاکلاز کا لباس پہنے ہوئے تھے۔ حملہ آوروں نے پہلے گارڈ کو فائرنگ کرکے ہلاک کیا پھرکلب میں داخل ہوکر فائرنگ کردی۔ مارے جانے والوں میں ایک پولیس اہلکار بھی شامل ہے، زخمیوں کو اسپتال منتقل کردیا گیا ہے،ترکی کی پولیس نے اعلان کیا ہے کہ اس دہشتگردانہ کارروائی کے بعد ایک حملہ آور کو فرار ہوتے ہوئے ہلاک کیا گیا ہے،استنبول شہر کے گورنر واسیپ شاہین نے اس واقعے کو دہشتگردانہ کارروائی قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اس حملے میں 35 افراد سمیت ایک پولیس اہلکار جاں بحق اور 46 دیگر افراد زخمی ہوگئے ہیں،ترکی میں مقامی میڈیا کے مطابق حملے کے وقت کلب میں 700  کے لگ بھگ افراد موجود تھے، جو سال نو کا جشن منانے کے لیے یہاں جمع ہوئے تھے،یاد رہے دس دسمبر کو ترکی کے استنبول شہر میں دو دھماکے ہوئے تھے جس میں 44 افراد ہلاک اور دسیوں دیگر زخمی ہوگئے تھے۔ ان حملوں میں پولیس اہلکاروں کو نشانہ بنایا گیا تھا،دہشتگردوں کے ممکنہ حملوں کے خدشے کے پیش نظر حالیہ دنوں میں استنبول میں سیکیورٹی کے انتظامات سخت کیے گئے تھے اور 17 ہزار کے قریب پولیس اہلکار شہر بھر میں گشت زنی کرتے تھے،واضح رہے کہ ہفتہ کے دن ترک پولیس نے انقرہ شہر میں داعش دہشتگرد گروہ سے منسلک 8 افراد کو گرفتار کیا تھا جو نئے سال کی آمد کے موقع پر دہشتگردانہ کارروائیاں کرنا چاہتے تھے,مقامی ذرائع کا کہنا ہے کہ ترکی میں 227 کے قریب افراد  2016 میں داعش کے دہشتگردانہ حملوں میں ہلاک ہوگئے ہیں۔
سحر



آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Tuesday - 2018 Sep 18