Thursday - 2018 مئی 24
Languages
11410:نتائج: 0.136سیکنڈ میں
جستجو برای :
۱۲۸ اراکین کی اس پارلیمنٹ نے آج اس دور کا پہلا اجلاس منعقد کیا جو ’’میشل المر‘‘ کے زیر انتظام ہوا اور اکثر اراکین نے ایک بار پھر نبیہ بری کو قومی اسپیکر کے طور پر منتخب کرلیا ہے ۔
یاد رہے کہ سعودی ولیعہد بن سلمان کے حکم پر بہت سے شہزادوں کو نظربند کردیا گیا تھا اور حکومتی اموال میں خرد برد کرنے کا الزام دیکر تقریباً ۱۰۰ ارب ڈالر وصول کئے گئے تھے۔
سائرون نامی اتحاد کے مرکزی دفتر کے رئیس ’’ضیاء الاسدی‘‘نے مقتدیٰ صدر کی پارٹی اور امریکہ کے درمیان ہر طرح کے رابطے کی تردید کی ہے۔
آج جبکہ اس حادثہ کو پورے ۲ برس ہوچکے ہیں پورے بحرین سے لوگ احتجاجی جلوس نکال کر آل خلیفہ کے ظالم نظام کے خلاف مظاہرے کررہے ہیں جن میں سب سے اہم مطالبہ یہی ہے کہ شیخ عیسٰی قاسم کی نظربندی کو ختم کیا جائے۔
10 مئی کو ہونے والے شامی حملے اسرائیل کے لئے اتنے سخت تھے کہ لاکھ چھپانے کے باوجود بھی وہ چھپا نہ سکے اور آخرکار یہ اقرار کرنے پر مجبور ہوگئے کہ اس دن کی صبح ان کے لئے قیامت سے کم نہیں تھی اور انہیں ایسا لگ رہا تھا جیسے آسمان ان پر آگ برسا رہا ہو۔
ترکی کی مسلح افواج کے ترجمان نے یہ بھی کہا کہ ہم آخری لمحہ تک دہشتگردوں سے مقابلہ کرتے رہیں گے چاہے ہمارے کتنے ہی جوانوں کو جان سے ہاتھ دھونا پڑے۔
اسرائیل کے مواصلاتی وزیر ’’ایوب قرا‘‘ نے اعلان کیا ہے کہ اس سال (Eurovision Song Contest) میں اس سال کچھ نئے مہمان شرکت کررہے ہیں جن میں سرفہرست سعودی عرب کے فنکار ہیں کہ جو اس عالمی مقابلے حصہ لے رہے ہیں ۔
حماس کے اس اعلیٰ عہدیدار نے تاکید کی ہے کہ اگر اسرائیل نے غزہ میں حملہ کرنے کی حماقت کی تو تل ابیب کو مقاومت کا شاندار سرپرایز ملے گا۔
جن ملکوں نے اب تک امریکہ کی پیروی کرتے ہوئے تل ابیب سے شہر قدس اپنے سفارتی عملوں کو منتقل کرنے کا حکم صادر کیا ہے ان میں گواتیمالا،پیراگے،اور جمہوریہ چیک وغیرہ سرفہرست ہیں۔
ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے سعودی مفتی اعظم حقیقت تو نہ بتا سکے لیکن ایک جھوٹا ادعا ضرور کربیٹھے کہ پوری تاریخ میں سعودی عرب ہی وہ ملک ہے جس نے ہمیشہ فلسطینیوں کی مدد کی ہے۔
  • کل نتائج : 11410