Tuesday - 2018 April 24
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 184893
Published : 3/1/2017 10:5

شریف یونیورسٹی کے ممتاز اسٹوڈنٹس کی رہبر انقلاب سے ملاقات:

میں مؤمن اور انقلابی جوانوں کی حمایت کرتا ہوں:رہبر انقلاب

رہبر انقلاب اسلامی حضرت آیت اللہ العظمی خامنہ ای نے شریف یونیورسٹی کے بعض ممتاز اساتذہ، اعلی اہلکاروں اور میڈلز حاصل کرنے والے محققین اور طلباء سے ملاقات میں فرمایا: میں مؤمن اور انقلابی جوانوں کی حمایت کرتا ہوں اور یونیورسٹی کے حکام کو بھی مؤمن اور انقلابی جوانوں کی حمایت کی بھر پور سفارش کرتا ہوں۔

ولایت پورٹل:
رہبر انقلاب اسلامی حضرت آیت اللہ العظمی خامنہ ای نے شریف یونیورسٹی کے بعض ممتاز اساتذہ،اعلی اہلکاروں اور میڈلز حاصل کرنے والے محققین  اور طلباء سے ملاقات میں فرمایا: میں مؤمن اور انقلابی جوانوں کی حمایت کرتا ہوں اور یونیورسٹی کے حکام کو بھی مؤمن اور انقلابی جوانوں کی حمایت کی بھر پور سفارش کرتا ہوں۔
رہبر انقلاب اسلامی نے فرمایا: میں اللہ تعالی کا شکر ادا کرتا ہوں کہ اس نے ہمارے ملک کو اچھے اور مؤمن جوان عطا کئے ہیں اور ہمارے جوانوں کو بھی اللہ تعالی کا شکر ادا کرناچاہئےکہ اس نے ان کے اندر ملک اور قوم کی خدمت کا جذبہ پیدا کیا ہے۔
رہبر انقلاب اسلامی نے ملک میں جاری علمی تحریک اور علمی پیشرفت کی طرف اشارہ کرتے ہوئے فرمایا: ملک میں علمی تحریک میں سست روی پیدا نہیں ہونی چاہئے بلکہ علمی پیشرفت برق رفتاری کے ساتھ جاری رہنی چاہئے۔
رہبر انقلاب نے میڈلز حاصل کرنے والے جوانوں اور محققین کو خطاب کرتے ہوئے فرمایا: ان میڈلز کی معنوی قدر و قیمت ان کی مادی قدر و قیمت سے کہیں زيادہ ہے۔
رہبر انقلاب اسلامی نے مؤمن اور انقلابی ہونے کے ساتھ علمی پیشرفت کو بہت ہی اہم قراردیتے ہوئے فرمایا: میں آپ کی طرف سے ہدیہ کئے گئے  ان میڈلز کو قبول کرنے کے بعد آپ کو ہی واپس کرتا ہوں اور آپ کی علمی ترقی اور پیشرفت پر اللہ تعالی کا شکر گزار ہوں۔
رہبر انقلاب اسلامی نے عالمی سطح پر امریکہ کی طرف سے جاری بحرانوں کی طرف اشارہ کرتے ہوئے فرمایا: آج امریکی ہتھیاروں کے ذریعہ علاقہ میں قتل عام جاری ہے اور انسانوں کے بے رحمانہ قتل عام کے پیچھے امریکی کمپنیاں فائدہ اٹھا رہی ہیں۔
رہبر انقلاب اسلامی نے فرمایا کہ بعض امریکی مفکرین اور دانشور، مغربی معاشروں خاص طور سے امریکہ میں موجود طرح طرح کے علمی ، فکری اور اخلاقی انحرافات ، خاندانوں کا شیرازہ بکھرنے ، بڑھتے ہوئے تشدد ، اخلاقی برائیوں اور خود کشیوں کا کھل کر اعتراف کرتے ہیں،آپ نے امریکی معاشرے میں ہتھیاروں سے ہونے والے قتل اور بڑھتے ہوئے تشدد  کی جانب اشارہ کرتے ہوئے یاد دہانی کرائی کہ امریکہ میں انسان کشی اور اسلحے کا چلن ایک  سنگین مسئلہ بن چکا ہے کہ جس کا حل صرف یہ ہے کہ عوام کے درمیان اسلحے کا استعمال روکا جائے لیکن امریکہ میں اسلحہ ساز کمپنیوں کے مافیا کے تسلط کی وجہ سے اس ملک کی حکومت بھی اسلحے کے استعمال کو غیر قانونی قرار دینے کی جرات نہیں رکھتی ہے۔
رہبر انقلاب اسلامی نے امریکہ کی گذشتہ 150 سال میں علمی پیشرفت میں مزاحمتی اقتصادی پالیسیوں کو اہم  قراردیتے ہوئے فرمایا: البتہ امریکیوں نے اس سے صرف مادی جہت میں استفادہ کیا ہے لیکن اگر ہم اپنے اندرونی وسائل سے استفادہ کریں اور مقاومتی اور مزاحمتی اقتصادی پالیسیوں پر عمل کریں تو ہم ملک کو مادی اور معنوی اعتبار سے ترقی اور پیشرفت کی شاہراہ پر گامزن کرسکتے ہیں۔
مہر




آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Tuesday - 2018 April 24