Sunday - 2018 Nov 18
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 185088
Published : 16/1/2017 16:15

یمنی فوج اور عوامی رضاکاروں نے آل سعود کو دیا کرارا جھٹکا

یمن کی فوج اور عوامی رضاکار فورس کے جوانوں نے اتوار کے روز صوبہ تعز میں سعودی ایجنٹوں کے ٹھکانوں پر حملہ کردیا جس میں متعدد سرغنوں سمیت 40 سعودی ایجنٹ ہلاک ہوگئے جبکہ بہت سے زخمی بھی ہوگئے.
ولایت پورٹل
:صوبہ مارب کے ضلع صرواح میں بھی توپخانے کےحملے میں 11سعودی فوجی مارے گئے- یہ ہلاکتیں خود سعودی ایجنٹوں کے توسط سے غلطی سے انجام پانے والے حملے میں ہوئیں،دوسری جانب یمن کی سیاسی اعلی کونسل کے سربراہ صالح الصماد نے اتوار کو یمن کے خلاف آل سعود حکومت کے جارحانہ حملوں میں صیہونی حکومت کے بھرپور کردار کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ یمنی فوج اورعوامی رضاکار فورس کی جنگ صرف سعودی جارحین کے خلاف نہیں ہے بلکہ یمنی قوم اس وقت صیہونی حکومت کے خلاف نبرد آزما ہے,صالح الصماد نے یہ باتیں المیادین ٹی وی چینل کے ساتھ انٹرویوں میں کہی- انہوں نے اس بات کا ذکر کرتے ہوئے کہ صیہونی حکومت نے بحیرہ احمرمیں کچھ جزائر اور آبنائے باب المندب کے اطراف کے علاقوں پر قبضہ کررکھا ہے کہا کہ اس میں علاقے کی بعض عرب حکومتیں بھی اسرائیل کے ساتھ ہم آہنگ ہیں اور وہ بھی اسرائیل کی مدد کررہی ہیں- صالح الصماد نے کہا کہ باب المندب سے یمنی فوج اور عوامی رضاکار فورس کے قریب ہونے پر جتنا صیہونی حکومت نے اظہار تشویش کیا ہے کسی بھی حکومت نے نہیں کیا ہے - انہوں نے سعودی عرب پر پوری طرح قابض ہونے کے لئے امریکہ اور صیہونی حکومت کے منصوبوں کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ سعودی عرب وہ پہلا ملک ہوگا جو امریکہ اور اسرائیل کی خدمت کی آگ میں جھلس جائے گا-آل سعود حکومت نے یمن کے مستعفی صدر ہادی منصور کو دوبارہ برسر اقتدار لانے کے لئے مارچ دوہزار پندرہ سے اب تک یمن کے نہتے عوام کے خلاف اپنے حملے جاری رکھے ہوئے ہیں جن میں اب تک 11000 سے زائد یمنی شہید ہوچکے ہیں۔
سحر


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Sunday - 2018 Nov 18