Monday - 2018 Sep 24
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 185174
Published : 22/1/2017 16:54

امام عصر (عج) کی حکومت کیسی ہوگی؟(۲)

آپ کا پرچم نصرت رسول اکرم (ص)کا پرچم ہوگا جس کا عمود عرش الٰہی کا بنا ہوا ہوگا اور وہ جس ظالم پر سایہ فگن ہو جائے گا اسے تباہ و برباد کر دے گا،آپ کی فوج کے افراد لوہے کی چادروں کی طرح سخت اور مستحکم ہوں گے اور ہر موٴمن کے پاس چالیس افراد کی طاقت ہوگی۔


ولایت پورٹل:
ہم نے اس سوال کے جواب میں کچھ معروضات پیش قارئین کئے تھے اور حضرت (عج) کی حکومت کے بعض خصوصیات کو پیش کیا تھا آج اسی کا دوسرا حصہ پیش کرنے کی سعادت حاصل کررہے ہیں اس امید کے ساتھ کہ خداوند عالم اس حکومت رحمت کا سایہ جلد از جلد مؤمنین کو نصیب فرمائے،لہذا سلسلہ بیان سے مرتبط ہونے کے لئے نیچے دیئے گئے لنک پر کلک کیجئے!
امام عصر (عج) کی حکومت کیسی ہوگی؟(۱)
۱۱۔ آپ کے سامنے تمام دنیا ہتھیلی پر ایک درہم کے مانند ہوگی اور آپ بغیر کسی حائل و حاجب کے تمام دنیا کے حالات کا مشاہدہ کریں گے۔
۱۲۔ آپ کے دور میں صاحبانِ ایمان کمال علم و عقل و ذہانت و ذکاوت کی منزل پر فائز ہوں گے اور آپ جس کے سر پر دست شفقت پھیر دیں گے اس کی عقل بالکل کامل و اکمل ہو جائے گی یہاں تک کہ آپ مختلف ملکوں میں بھیجے جانے والے نمائندوں کو ہدایت کریں گے کہ اگر کوئی مسئلہ سمجھ میں نہ آئے تو اپنی ہتھیلی کو دیکھ لینا تمام علوم اور مسائل نقش نظر آجائیں گے۔
۱۳۔ مساجد میں جدید قسم کے مینار، حجرات اور نقوش جو دور مرسل اعظم(ص) میں نہیں تھے انہیں محو کر دیا جائے گا اور مساجد کو ان کی اصلی اسلامی سادگی کی طرف واپس کر دیا جائے گا۔
۱۴۔ مسجد الحرام اور مسجد النبی(ص) کی از سر نو اصلاح و ترمیم ہوگی اور جس قدر بھی بے جا تعمیرات ہوئی ہیں ان کی اصلاح کر دی جائے گی اور مقام ابراہیم کو بھی اس کی اصلی منزل تک پلٹا دیا جائے گا۔
۱۵۔ آپ کا نور مبارک اس قدر نمایاں اور روشن ہوگا کہ ساری دنیا کے لوگ بآسانی آپ کی زیارت کر سکیں گے اور ہر شخص آپ کو اپنے سے قریب تر اور اپنے ہی علاقہ اور محلہ میں محسوس کرے گا۔
۱۶۔ آپ کا پرچم نصرت رسول اکرم (ص)کا پرچم ہوگا جس کا عمود عرش الٰہی کا بنا ہوا ہوگا اور وہ جس ظالم پر سایہ فگن ہو جائے گا اسے تباہ و برباد کر دے گا،آپ کی فوج کے افراد لوہے کی چادروں کی طرح سخت اور مستحکم ہوں گے اور ہر موٴمن کے پاس چالیس افراد کی طاقت ہوگی۔
۱۷۔ موٴمنین کی قبروں میں بھی ظہور کی خوشی کا داخلہ ہو جائے گا اور آپس میں ایک دوسرے کو مبارکباد دیں گے اور بعض قبروں سے اٹھ کر نصرت ِ امام کے لیے باہر آئیں گے جیساکہ دعائے عہد میں وارد ہوا ہے کہ:«پروردگار! اگر مجھے ظہور سے پہلے موت بھی آجائے تو وقت ِ ظہور اس عالم میں قبر سے اٹھانا کہ کفن دوش پر ہو، برہنہ تلوار ہاتھ میں ہو، نیزہ چمک رہا ہو، اور زبان پر لبیک لبیک ہو۔
۱۸۔ آپ اپنے تمام چاہنے والوں کے قرضوں کو ادا فرما دیں گے اور انہیں خیرات و برکات سے مالا مال کر دیں گے، بشرطیکہ قرضہ کا تعلق حرام مصارف سے نہ ہو ورنہ اس کا مواخذہ بھی کریں گے۔
۱۹۔ آپ جملہ بدعتوں کا قلع قمع کر دیں گے اور عالم انسانیت کو شریعت پیغمبر اسلام(ص) کی طرف پلٹا کر لے آئیں گے یہاں تک کہ ہزاروں بدعقیدہ لوگ آپ کے واپس چلے جانے کا مطالبہ کریں گے اور آپ سب کا خاتمہ کر دیں گے۔
۲۰۔ آپ کے جملہ روابط اور تعلقات صرف ان افراد سے ہوں گے جو واقعاً موٴمن مخلص ہوں گے اور کسی منافق اور ریاکار کا کوئی ٹھکانہ نہ ہوگا، دشمنانِ آل محمد(ص) یعنی بنی امیہ و بنی عباس، قاتلانِ حسین اور نواصب و خوارج سب کا خاتمہ کر دیں گے اور کسی ایسے آدمی کو زندہ نہ چھوڑیں گے جو گذشتہ افراد و اقوام کی بد اعمالیوں اور ان کے مظالم سے راضی ہوگا۔
اللّٰھم عجل فرجہ و سھل مخرجہ و اجعلنا من انصارہ و اعوانہ۔(انتخاب از  معرفت امام عصر عج مصنف سید ذیشان حیدر جوادی)۔
tvshia


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2018 Sep 24