Friday - 2018 مئی 25
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 185247
Published : 25/1/2017 18:36

حضرت زینب(س) کی تاریخ ولادت اور نام

آپ کا اسم گرامی زینب ہے،اصل میں «زین اب» یعنی باپ کی زینت، کثرت استعمال کی وجہ سے الف گر گیا ہے،اسی لئے بعض علماء نے کہا: چونکہ حضرت صدیقہ طاہرہ (س) ام ابیھا ہیں اسی لئے بڑی شہزادی کا نام زینب یعنی «زین ابیھا» رکھا گیا ہے۔

ولایت پورٹل:
حضرت زینب(س) کی تاریخ ولادت جو شیعوں کے درمیان مشہور ہے پانچ جمادی الاول چھ ہجری ہے،جس طرح امام حسین (ع) کا نام خدا کی طرف سے رکھا گیا اسی طرح آپ کا نام بھی خدا کی طرف سے معین ہوا، جب آپ پیدا ہوئیں،جناب فاطمہ (س)نے حضرت علی (ع) سے کہا:«سمّ ھذہ المولودۃ، فقال ما کنت لأسبق رسول اللہ (کان فی سفر)، ولما جاء النبی(ص) ساله علی(ع) فقال ماکنت لاسبق ربّی اللہ تعالی، فھبط جبرئیل یقرء علی النبی السلام من اللہ الجلیل وقال له سمّ هذہ المولودۃ زینب، ثمّ اخبرہ بما یجری علیھا من المصائب فبکی النبی وقال من بکی علی مصائب ھذہ البنت کان کمن بکی علی اخویھا الحسن والحسین»۔
یعنی حضرت فاطمہ (س) نے مولا علی(ع) سے عرض کیا:اس نو مولود بچی  کا نام انتخاب کردیجئے!علی (ع) نے فرمایا: میں نے کسی بھی کام میں رسول خدا (ص) پر سبقت نہیں کی ہے۔چونکہ حضرت(ص) آپ سفر پر تھے۔ جب آپ تشریف لائے تو علی (ع) نے سوال کیا،آپ (ص) نے ارشاد فرمایا:میں نے بھی کسی کام کو خدا کے حکم کے بغیر انجام نہیں دیا،اسی وقت جبرئیل امین نازل ہوئے اور رسول اللہ(ص)کو خدا کا سلام پہنچایا اور فرمایا: اس بچی کا نام زینب رکھا جائے،پھر رسول خدا (ص) کو اس نو مولود پر ہونے والے سارے مصائب سنائیں،تو رسول خدا (ص) آنسو بہانے لگے، پھر فرمایا :جو بھی اس بچی کی مصیبتوں پر آنسو بہائے گا ایسا ہے کہ ان کے بھائی حسن اور حسین (ع)پر آنسو بہایا ہو۔
آپ کا اسم گرامی زینب ہے،اصل میں «زین اب» یعنی باپ کی زینت، کثرت استعمال کی وجہ سے الف گر گیا ہے،اسی لئے بعض علماء نے کہا: چونکہ حضرت صدیقہ طاہرہ (س) ام ابیھا ہیں اسی لئے بڑی شہزادی کا نام زینب یعنی «زین ابیھا» رکھا گیا ہے۔
ابنا


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Friday - 2018 مئی 25