Tuesday - 2018 August 14
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 185378
Published : 31/1/2017 16:59

بچے پر ماں کے دودھ کے اثرات

ماں کو چاہئے کہ بچے کو خود اپنا دودھ پلائے،خود بسم اللہ پڑھ لے اور جتنی دیر بچہ دودھ پیتا رہے ماں اللہ کے ذکر میں مشغول رہے۔


ولایت پورٹل:
ماں کو چاہئے کہ بچے کو خود اپنا دودھ پلائے،خود بسم اللہ پڑھ لے اور جتنی دیر بچہ دودھ پیتا رہے ماں اللہ کے ذکر میں مشغول رہے ماں اللہ رب العزت کی یاد میں مشغول رہے ماں دعائیں کرتی رہے کہ اللہ ! میرے دودھ کے ایک قطرے میں میرے بیٹے کو علم کا سمندر عطا فرما تو ماں کی اس وقت کی دعائیں اللہ کے یہاں قبول ہوتی ہیں چنانچہ جو بزرگان دین گزرے  ان کی ماؤں نے تو ایسی تربیت کی کہ با وضو اپنے بچوں کو ددھ پلاتی تھیں اگر آج کوئی با وضو دودھ پلائے تو وہ بڑی خوش نصیب ہے۔
چنانچہ ایک ماں اپنے بیٹے سے ناراض ہوئی کہنے لگی بیٹے! تم نے میری بات نہ مانی تو میں کبھی بھی تمہیں اپنا دودھ معاف نہیں کرونگی،اس نے مسکراکر کہا،امی! میں تو نیڈو کے ڈبے کا دودھ پی کر بڑا ہوا ہوں آپ نے تو مجھے اپنا دودھ پلایا ہی نہیں مجھے معاف کیا کریں،تو واقعی ایسا دیکھا گیا کہ، ڈبوں کے دودھ کے اثرات اور ہوتے ہیں اور ماں کے دودھ کے اثرات اور ہوتے ہیں۔




آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Tuesday - 2018 August 14