Monday - 2019 January 21
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 185440
Published : 2/2/2017 19:0

ٹرمپ کی پالیسی غلط اور تفرقہ انگیز ہے:برطانوی وزیراعظم

برطانیہ کی وزیر اعظم بھی آخرکار امریکہ کے نومنتخب صدر ٹرمپ کے ہنگامہ خیز فیصلے کو تفرقہ انگیز اور غلط قرار دینے پر مجبور ہوگئیں-

ولایت پورٹل:برطانوی وزیراعظم تھریسامے بھی پانچویں روز ، نئے امریکی صدر کی جانب سے سات اسلامی ملکوں کے شہریوں پر امریکہ کے سفر پر پابندی کے فیصلے کی مذمت کرنے پر مجبور ہوگئیں،برطانوی وزیر اعظم تھریسا مے نے امریکی صدر کی جانب سے سات اسلامی ملکوں کے شہریوں پر امریکہ  کے سفر پر پابندی کے حکمنامے پر دستخط کئے جانےکے بعد جمعے کو وہائٹ ہاؤس میں ٹرمپ سے ملاقات کی تھی،برطانوی وزیر اعظم نے لیبر پارٹی کے رہنما جرمی کوربین کے دباؤ میں ممبران پارلیمنٹ کے سامنے کہا کہ صدرٹرمپ کی جانب سے پیش کی جانے والی پالیسیوں کے بارے میں ان کی حکومت کا موقف واضح ہے کہ ان کی پالیسی غلط ہے,برطانوی وزیر اعظم نے کہا کہ ہمارا خیال ہے کہ یہ پالیسی غلط اور تفرقہ انگیز ہے،تھریسا مے نے مزید کہا کہ اگر جرمی کوربین مجھ سے پوچھ رہے ہیں کہ مجھے سفر پر پابندی عائد کئے جانے کی پہلے سے اطلاع تھی تو اس کا جواب یہ ہے کہ ہم سب کو اطلاع تھی کیونکہ صدرٹرمپ نے اپنی انتخابی مہم کے دوران یہ بات کہی تھی،برطانوی وزیر اعظم تھریسا مے پہلے ٹرمپ کے اس فیصلے کی مذمت کرنے سے پیچھے ہٹ گئی تھیں اور کہا تھا کہ امریکہ پناہ گزینوں کے سلسلے میں اپنی پالیسیوں کا خود ذمہ دار  ہے،انھوں نے اس کے کچھ دنوں بعد ایک بیان جاری کیا جس میں کہا کہ وہ اس فیصلے کی حامی نہیں ہیں،برطانیہ کے اٹھارہ لاکھ افراد نے ایک طومار پر دستخط کر کے ٹرمپ کا دورہ لندن منسوخ کئے جانے کا مطالبہ کیا ہے-
سحر




آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2019 January 21