Sunday - 2018 April 22
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 186784
Published : 19/4/2017 18:12

حشد الشعبی اپنی دینی اور قومی ذمہ داری سجھ کر لڑتی ہے:عمار حکیم

عراق میں مسلح ملیشیا نام کی کوئی تنظیم موجود نہیں ہے جو لوگ فوج کے شانہ بشانہ دہشتگردی کے خلاف لڑرہے ہیں ان میں کسی بھی طرح کا قبیلگی رجحان نہیں پایا جاتا۔

ولایت پورٹل:سید عمار حکیم نے قاہر ہ میں  ایک مصری نیوز ایجنسی کو انٹرویو دیتے ہوئےعراقی فوج کے بارے میں کہا:ہماری فوج میں کسی بھی طرح کا قبیلگی رجحان نہیں پایا جاتا  اور جتنے لوگ حشد الشعبی میں  رہ کر لڑ رہے ہیں وہ سب آیت اللہ سیستانی دام ظلہ کی  ؤواز پر لبیک کہتے ہوئے نکلے ہیں لیکن ان میں سے بھی کوئی شخص قانون کی خلاف ورزی کرے گا تو اس کے خلاف کاروائی کی جائے گی،انھوں نے مزید کہا:داعش ایک وحشی تنظیم ہے جو عام شہریوں کو نشانہ بناتے  ہیں  اور انھیں ڈھال کے طور پر استعمال کرتے ہیں اس لیے ان دہشتگردوں سے مقابلہ کے لیے پوری قوم متحد ہےاور حشد الشعبی نے ہزاروں شہید دیے ہیں جنہیں بھلایا نہیں جاسکتا۔
ہدانا




آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Sunday - 2018 April 22