Friday - 2019 January 18
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 187406
Published : 23/5/2017 16:36

مغرب میں آزادی نسواں کی حقیقت رہبر انقلاب کی زبانی:

مغرب کے سرمایہ داروں نے سستے مزدوروں کی تلاش میں عورت کو اس کے گھر سے باہر نکال دیا:رہبر انقلاب

تاریخ میں عورتوں پربہت ظلم ہوا ہے لیکن یہ عام، ہمہ گیر اور ہمہ جہت ظلم اسی عصر کی دین ہے جس کا سرچشمہ مغربی تہذیب و تمدن ہے۔

ولایت پورٹل:
جب یوروپ نے جدید صنعتوں کی ایجاد کی اور انیسویں صدی میں مغربی سرمایہ داروں نے بڑے بڑے کارخانہ جات تعمیر کئے تو سستے اور کم پر راضی ہوجانے والے مزدوروں کی ضرورت پیش آئی،لہٰذا انہوں نے آزادی نسواں کا راگ الاپنا شروع کیا تاکہ عورت کو گھر سے باہر نکال کر کارخانہ تک لائیں،ایک سستے مزدور کی حیثیت سے اس سے کام لیں،اپنی جیبیں گرم کریں اور عورت سے اس کا عالی شان مقام و مرتبہ چھین لیں،آج بھی مغربی دنیا میں جو«آزادیٔ نسواں» کا شور مچارہے ہیں تو یہ وہی پرانی روایت اور رسم رواج ہے جس کو وہ دہرارہے ہیں،لہٰذا مغربی تہذیب میں عورت پر ہونے والے ظلم اور مغربی ادبیات میں ان کے سلسلہ میں پیش کئے جانے والے غلط تصور کی نظیر پوری تاریخ میں نہیں ملتی۔
تاریخ میں عورتوں پربہت ظلم ہوا ہے لیکن یہ عام، ہمہ گیر اور ہمہ جہت ظلم اسی عصر کی دین ہے جس کا سرچشمہ مغربی تہذیب و تمدن ہے۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Friday - 2019 January 18