Sunday - 2018 Nov 18
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 188131
Published : 2/7/2017 16:1

رمضان کے بعد ہمیں کیا کرنا چاہیے؟

ماہ رمضان کے بعد حاصل ہونے والی بہترین فرصت کو ضائع نہ کریں،اس شخص کی طرح نہ ہو جائیں کہ جس نے ایک دکان سے سب کچھ خرید لیا ہو مگر ٹوکری کا منھ کھول کر نہ دیکھے۔

ولایت پورٹل:حجت الاسلام علی رضا پناھیان نے اپنی ایک گفتو میں بیان کیا کہ ہماری سب سے بڑی غفلت یہ ہے کہ ہم  ماہ رمضان کے بعد کے دنوں کی قدر و قیمت کو صحیح طریقے سے نہیں پہچانتے،حالانکہ جو کچھ ہم رمضان المبارک میں عبادت کرتے ہیں وہ رمضان کے بعد کی معنوی زندگی کا ایک نیا آغاز ہوتا ہے،اس کی مثال ایسے ہی جیسا کہ ہم کسی دکان سے بہت سی چیزیں خریدیں اور رمضان کے بعد ہم ان خریدی ہوئی چیزوں کو اپنے گھر میں لے آتے ہیں تو ہمیں چاہیے کہ انہیں کھول کر دیکھیں اور ان سے استفادہ کریں لیکن عام طور پر ہم ان سے استفادہ نہیں کرتے،تقویٰ روزے کا نتیجہ ہے جو رمضان المبارک کے بعد ہماری زندگی میں نظر آنا چاہئے۔
مؤمنین رمضان المبارک ختم ہونے تک ایک لذت سے آشنا ہو چکے ہوتے ہیں لیکن شیطان کبھی نہیں چاہے گا کہ ہم اپنی اس معنوی لذت کی طرف توجہ کریں اور اس سے استفادہ کریں،رمضان کے بعد کی خوشی، ورزش کے بعد حاصل ہونے والی خوشی کی طرح ہوتی ہے، اور یہ بہت ہی بری بات ہے  کہ انسان کو جو خوشی، نشاط اور توانائی ورزش کے بعد حاصل ہو وہ اس سے درست استفادہ نہ کرے،پس ہمیں رمضان المبارک کے بعد کے ایام سے بھر پور طریقے سے استفادہ کرنا چاہیئے۔
شبستان


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Sunday - 2018 Nov 18