Tuesday - 2018 August 14
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 188370
Published : 15/7/2017 12:6

امریکہ کی ہٹ دھرمی،عراق سے فوج واپس نہیں جائےگی

یہ ایسی حالت میں ہے کہ جب عراق میں بہت سے عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ داعش مخالف نام نہاد عالمی اتحاد کے فوجی، دہشت گرد گروہوں کے ساتھ تعاون کرتے ہیں اور عراقی کی عوامی رضاکار فورس الحشدالشعبی کی پیشقدمی میں رکاوٹ ڈالتے ہیں۔ عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ دہشت گردی کے خلاف نام نہاد اتحاد کا عراقی فوج کے ساتھ تعاون کا دعوی زبانی جمع خرچ کے سوا کچھ نہیں ہے۔


ولایت پورٹل:امریکی وزارت خارجہ کے ترجمان نے کہا ہے کہ عراق میں داعش کی شکست کے بعد بھی داعش مخالف عالمی اتحاد اس ملک سے باہر نہیں نکلےگا۔
امریکہ کی وزارت خارجہ کے ترجمان نےاسکائی نیوز کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ موصل کی آزادی کے باوجود داعش مخالف عالمی اتحاد، دہشت گرد گروہوں کے خلاف جنگ اور اپنی موجودگی جاری رکھنے کے لئے اس اتحاد کے اراکین کے ساتھ لازمی یکجہتی پیدا کرنے کی کوشش کررہا ہے۔
امریکہ کی وزارت خارجہ کے ترجمان نے دہشت گردوں کی جانب سے افرادی قوت بھرتی کرنے کا سلسلہ جاری رکھےجانے کی بابت خبردار کرتے ہوئے کہا کہ واشنگٹن میں ایسے ورکنگ گروپ تشکیل دیئے گئے ہیں کہ جو اس مسئلے کا جائزہ لے رہے ہیں اور اس چیلینج کا مقابلہ کرنے کے بارے میں تحقیق کررہے ہیں۔
یہ ایسی حالت میں ہے کہ  جب عراق میں بہت سے عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ داعش مخالف نام نہاد عالمی اتحاد کے فوجی، دہشت گرد گروہوں کے ساتھ تعاون کرتے ہیں اور عراقی کی عوامی رضاکار فورس الحشدالشعبی کی پیشقدمی میں رکاوٹ ڈالتے ہیں۔
عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ دہشت گردی کے خلاف نام نہاد اتحاد کا عراقی فوج کے ساتھ تعاون کا دعوی زبانی جمع خرچ کے سوا کچھ نہیں ہے۔
ابلاغ




آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Tuesday - 2018 August 14