Wed - 2018 August 15
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 188377
Published : 15/7/2017 15:59

حجاب کرامت انسانی کی ضمانت ہے:محترمہ عفت شریعتی

عالمی مجلس تقریب مذاہب کے خواتین کے امور کی سربراہ نے اس بات کی تاکید کی کہ:پردہ تقریب مذاہب میں ایک بنیادی حیثیت رکھتا ہے، حجاب کرامت انسانی کی ضمانت ہے۔


ولایت پورٹل:عالمی مجلس تقریب مذاہب میں خواتین کے امور کی سربراہ،محترمہ ڈاکٹر عفت شریعتی نے«حجاب محور تقریب» کے موضوع کے تحت گفتگو میں کہا کہ:قرآن کریم میں ارشادہوتا ہے:«من عمِل صالحاً من ذَکر او اُنثیٰ و ھو مؤمن فلَنُحیینَّه حَیاۃً طیّبة»۔یہ آیت اس بات کی جانب اشارہ ہے کہ زندگی کی سعادت عمل کی مرہون منت ہے، پس مؤمنین کا عمل بنیادی حیثیت رکھتا ہے، خداوندکریم نے خواتین کے لئے کوئی مشکل ایجاد نہیں کی ہے، خواتین اپنی سعادت کی راہ میں مختار اور مردوں کے شانہ بشانہ ہیں۔
انھوں نے مزید کہا کہ:اس بنا پر ایک سعادت مند معاشرے کے لئے راہ کا ہموار ہونا اہمیت کا حامل ہے اور یہ راہ درست کردار سے ہی محقق ہوگی، لہذا ایک خاتون کا حجاب اور اسکی متین پردہ داری کہ جو کرامت کے ساتھ ہو اس راہ میں شکوفائی کرتا ہے اور اسے کامیابی کی کلید سمجھنا چاہیے۔
محترمہ شریعتی نے کہا کہ:پردہ کسی بھی قسم کی محدودیت ایجاد نہیں کرتا بلکہ یہ تمام تر خطرات سے ایک بچاؤ کی ایک تدبیر ہے۔
انھوں نے تقریب مذاہب اور حجاب کی جانب اشارہ کیا اور کہا کہ:تقریب مذاہب بھی اسی طرح سے ایک کامیابی ہے، انھوں نے کہا کہ:حجاب تقریب مذاہب کا ایک وسیلہ ہے جو تقریب مذاہب کے سلسلے میں نہایت اہم کردار ادا کر سکتا ہے۔
انھوں حضرت شعیب علیہ السلام کی بیٹیوں کی داستان کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ: قرآن کریم نے ایک اہم نکتے کی جانب اشارہ کیا کہ جناب شعیب کی بیٹیاں اپنے گھر کی ضروریات گھر کے باہر سے پوری کرتی تھی اور اپنی بھیڑیں چرایا کرتی تھی اپنے باپ کا ہاتھ بٹایا کرتی تھیں، لیکن قرآن نے اہم ترین دستور عمل کیجانب متوجہ کیا کہ:«تمشی علی  استحیاء»۔یعنی ان لڑکیوں کی راہ و روش حیا پر مبنی تھی۔
محترمہ ڈاکٹر شریعتی نے تاکید کی کہ:یہ بہت اہم مسئلہ ہے کہ خاتون اجتماعی پروگراموں میں باپردہ ہو اور پردے کو بیان کرنے والی ہو تو وہ اپنے اجتماعی مقاصد میں کامیاب رہے گی۔
تقریب


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Wed - 2018 August 15