Wed - 2018 Oct. 17
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 188379
Published : 15/7/2017 16:16

بیداری اسلامی:

رہبر انقلاب کی نظر میں عالم اسلام کی سب سے بڑی مشکلات

ان مشکلات کا جائزہ لیا جائے جن کی بنا پر یہ باصلاحیت اور پر استعداد قوم ان تمام منفرد اور کارساز وسائل سے کام نہیں لے سکی،نتیجہ میں اسلامی ممالک کا قافلۂ بشری دانش سے پیچھے اور اپنی عظیم مادی دولت سے بے بہرہ رہ گیا،عالمی ثقافت کی دوڑ میں غیروں کی تہذیب کا نشانہ بنا تو بین الاقوامی سیاست میں دوسروں کا تابع بن گیا اور فوجی اعتبار سے سامراجی طاقتوں کی یلغار کا دکھ جھیلتا رہا۔


ولایت پورٹل:آئیے اب وقت آگیا ہے کہ امت اسلامی کے مشکلات پر نظر ڈالی جائے اور ان مشکلات کا جائزہ لیا جائے جن کی بنا پر یہ باصلاحیت اور پر استعداد قوم ان تمام منفرد اور کارساز وسائل سے کام نہیں لے سکی،نتیجہ میں اسلامی ممالک کا قافلۂ بشری دانش سے پیچھے اور اپنی عظیم مادی دولت سے بے بہرہ رہ گیا۔
عالمی ثقافت کی دوڑ میں غیروں کی تہذیب کا نشانہ بنا تو بین الاقوامی سیاست میں دوسروں کا تابع بن گیا اور فوجی اعتبار سے سامراجی طاقتوں کی یلغار کا دکھ جھیلتا رہا۔
ان میں سے زیادہ تر پریشانیاں امت اسلامی کی اندرونی خیانت ،غلط کارکردگی یا غفلت کا نتیجہ ہیں ان کمزوریوں کی فہرست بہت طولانی ہے کہ ان جملہ پریشانیوں میں کچھ کا تذکرہ درج ذیل ہے:
1۔فرقہ وارانہ اختلافات، اس کا زیادہ تر سبب غلط علماء اور زرخرید مصنفین تھے کہ جن کے ذریعہ اختلافات کو بڑھاوا دیا گیا اور ان میں تیزی آتی گئی۔
2۔قومی و ملی اختلافات، جو انتہا پسندانہ تصور قومیت کا نتیجہ ہیں اور اس کا سبب وہ وابستہ روشن فکر افراد تھے کہ جن کے ذریعہ ان کو ہوا دی گئی۔
3۔مداخلت کرنے والی طاقتوں کے سامنے سر تسلیم خم کردیناکہ جنہوں نے بہت سے ممالک کو بڑی طاقتوں کے سامنے جھکنے پر مجبور کردیا۔
4۔مغرب کی فاسد تہذیب کے سامنے سر تسلیم خم کردینا یہاں تک کہ سیاسی یا عقیدتی وجوہات کی بنا پر اس کی ترویج و تشہیرکرنا۔
5۔بہت ساری حکومتوں کی اپنے عوام سے بے توجہی اور بے اعتقادی ان کے اپنے ارادے، عقیدے، ضرورتوں اور خود غرضیوں کی خاطر۔
6۔اسلامی دنیا کی بہت سی سیاسی اور ثقافتی شخصیتوں کا دنیا پرمسلط طاقتوں، خاص کر آج امریکہ سے مرعوب ہوجانا۔
7۔اسلامی علاقہ کے قلب میں غاصب صہیونی حکومت کا موجود ہونا بھی بہت ساری مشکلوں کا سبب ہے۔
8۔دین کے سیاست سے الگ ہونے کا پروپیگنڈہ، انفرادی تجربہ کے عنوان سے دین اسلام کا تعارف کرانا اور یہ بتانا کہ اسلام کا زندگی کے مسائل مثلاً حکومت، سیاست اور اقتصادیات وغیرہ سے کوئی تعلق نہیں ہے۔
اگر سیاسی اور دینی رہنما اخلاص ،ہمت اور اپنی آزاد شخصیت کا ثبوت دیتے تو اس طرح کی ایسی دسیوں مشکلیں حل ہوسکتی تھیں جن کی جڑیں تاریخ کی گہرائیوں میں دور تک پھیلی ہوئی ہیں،مذکورہ مشکلیں اسلام کی مصیبتوں کا سبب ہیں اور نتیجہ میں فقر، جہل، نسلی امتیاز ،ناکامی، پسماندگی، جنگ، خرافات اورتعصب جیسے تحفے ہاتھ آئے ہیں۔




آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Wed - 2018 Oct. 17