Monday - 2018 April 23
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 188721
Published : 30/7/2017 12:35

عالمی طاقتیں امت مسلمہ کو تقسیم کرنے کی پالیسی پر گامزن ہیں:لیاقت بلوچ

دہشتگردی کے پے درپے واقعات کے بعد لاہور میں ملی یکجہتی کونسل پاکستان کی مرکزی کابینہ کا اجلاس ہوا،جس میں 18 سے زائد دینی جماعتوں کے قائدین نے شرکت کی اور چاروں صوبوں کے ہیڈکوارٹرز میں فرقہ واریت کے خاتمے اور یکجہتی و محبت کے پیغام کو عام کرنے کیلئے کانفرنسز کے انعقاد کا فیصلہ کیا گیا۔

ولایت پورٹل:جماعت اسلامی پاکستان اور ملی یکجہتی کونسل کے مرکزی سیکرٹری جنرل و سابق رکن قومی اسمبلی لیاقت بلوچ نے کہا کہ فلسطین کے درینہ مسلے کے حل کیلئے پاکستان کو ترکی،ملیشیاء اور انڈونیشیاء کے ساتھ مل کر مشترکہ حکمت عملی طے کرنی چاہئے۔
دہشتگردی کے پے درپے واقعات کے بعد لاہور میں ملی یکجہتی کونسل پاکستان کی مرکزی کابینہ کا اجلاس ہوا،جس میں 18 سے زائد دینی جماعتوں کے قائدین نے شرکت کی اور چاروں صوبوں کے ہیڈکوارٹرز میں فرقہ واریت کے خاتمے اور یکجہتی و محبت کے پیغام کو عام کرنے کیلئے کانفرنسز کے انعقاد کا فیصلہ کیا گیا۔
لیاقت بلوچ نے کہاکہ بدقسمتی سے فاٹا کے عوام ابھی تک اپنے بنیادی حقوق سے محروم ہیں،پانامہ لیکس کے انکشافات کے بعد وزیراعظم نواز شریف کو مشورہ دیا تھا کہ وزیراعظم کو زیب نہیں دیتا کہ وہ جے آئی ٹی میں پیش ہو، اس لئے قومی اسمبلی میں اکثریت کی بناء پر انہیں نیا قائد ایوان لانا چاہئے تھا۔
لیاقت بلوچ نے کہاکہ عالمی طاقتیں امت مسلمہ کو تقسیم در تقسیم کی پالیسی پر گامزن ہےاور قطر اور سعودی عرب کا تنازعہ اسی کا تسلسل ہے۔

شفقنا


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2018 April 23