Monday - 2018 Dec 10
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 188726
Published : 30/7/2017 15:54

آیت اللہ سیستانی کےگھر،کربلا،نجف اور سامرا کے روضوں پربہت بڑے حملہ کی سازش ناکام

عراق کے خفیہ ادارے نے اس ملک کی تاریخ کے سب سے بڑے حملہ کی سازش کو ناکام بنانے کی خبر دی ہے۔


ولایت پورٹل:السومریہ نیوز  نے لکھا ہے کہ عراق کی وزارت داخلہ کے شعبہ خفیہ ادارے کی رپورٹ کے مطابق دہشتگرد نجف ،کربلا اور سامرہ کے روضوں پر حملہ کرنے کے ساتھ عالم تشیع کے گرانقدر مرجع سید علی سیستانی کے گھر کو بھی نشانہ بنانا چاہتے تھے،تاہم ابھی تک اس سازش کی تفصیلات منظر عام پر نہیں آئی ہیں لیکن عراقی وزارت داخلہ کا کہنا ہے کہ اس کا مقصدملک میں خانہ جنگی چھیڑنا اور داعش سے لوگوں کے ذہنوں کو موڑنا تھا،عراق کے سرکاری اخبار الصباح نے خفیہ ادارے کے سربراہ ابو علی البصری کا حوالہ دیتے ہوئے لکھا ہے کہ داعش اپنے غیر ملکی سرغنوں سے مل کر یہاں کے مقدس مقامات  جن میں کربلائے معلی ،نجف اشرف ،مسجد کوفہ اور بصرہ کے علاوہ آیت اللہ سیستانی کا گھر بھی شامل تھا ،پر حملہ کرنے سازش کر رہی تھی  جس کی اطلاع ملتے ہیں  ہم نے عراقی صدر اور سپرم کمانڈر حیدر العبادی نیز وزیر داخلہ قاسم الاعرجی سے مشورہ کرکے دہشتگردوں کے ان مقامات کی طرف نکلنے سے کچھ ہی گھنٹے پہلے  ان کے  ٹھکانوں پر بمباری کردی جس کے نتیجہ دسیوں دہشتگرد ہلاک اور داعش کی یہ خطرناک سازش ناکام ہوگئی۔
فارس




آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2018 Dec 10