Saturday - 2018 Dec 15
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 188780
Published : 1/8/2017 16:1

بچے کی نفسیات پرکھنے کے طریقے(2)

اپنے بچے سے کئے ہوئے وعدے کو پورا کرکے آپ اس کا دل جیت لیں گے،چاہے وہ ساحل سمندر پر جانے کا ہو یا سپر مارکیٹ کا،اپنے وعدے پر قائم رہئیے اس طرح آپ کے بچے میں بھی ایمانداری بڑھے گی۔


ولایت پورٹل:قارئین کرام! ہم نے گذشتہ کالم میں یہ عرض کیا تھا کہ والدین اسی وقت اپنے بچے کی صحیح تربیت کرسکتے ہیں کہ جب وہ اس کی نفسیات سے آگاہ ہوں،اس کے لئے چند طریقے گذارش کئے گئے جن کا ماحصل یہ ہے کہ والدین ہمیشہ بچے کی مصروفیات پر نظر رکھیں،اس طرح آپ کو یہ جاننے میں مدد ملے گی کہ آپ کا بچہ کیسے کھیلتا ہے کیسے کھاتا ہے اور کس طرح دوسروں سے بات چیت کرتا ہے،آپ کو اس کی بہت سی خوبیوں سے آگاہی ہوگی،۔مشاہدہ کیجئے کہ آیا آپ کا بچہ کسی تبدیلی میں جلد رچ بس جاتا ہے یا وقت لیتا ہے،سارے بچے ایک جیسی خوبیوں کے حامل نہیں ہوتے،یاد رکھئے ہر بچے کی الگ خصوصیت اور شخصیت ہوتی ہے،آج کی گفتگو باقی رہ گئے کچھ اور طریقوں پر ہوگی کہ جن کے سبب والدین باآسانی بچوں کے نفسیات کو پرکھ کر ان کی صحیح تربیت کرسکتے ہیں،لہذا ہمارے اس آرٹیکل کو ابتداء سے پڑھنے کے لئے اس لنک پر کلک کیجئے!
بچے کی نفسیات پرکھنے کے طریقے(1)
5۔ اس کی بات سنئے
اپنے بچے کی بات رد کرنے کے بجائے غور سے سنیں اگر آپ اس سے متفق نہیں ہیں تواسے اپنے خیالات سے آگاہ کیجئے۔
6۔اس پر الزام تراشی نہ کیجئے
اگر وہ کوئی غلطی کرتا ہے تواسے بتائیں کہ اس نے جو کیا وہ صحیح نہیں تھا،لیکن آپ اب بھی اس سے محبت کرتے ہیں۔
7۔ اپنے بچے کو پر اعتماد بنائیں
اس میں اعتماد پیدا کریں۔اگر اسکا اسکول میں پہلا دن ہے تو اس سے اسکول کے بارے میں پوچھیں،اس نے اسکول میں کیا پڑھا،اسے اپنا ٹیچر کیسا لگا،اس نے کوئی دوست بنایا یا نہیں۔اس کا اعتماد بڑھائیں تاکہ وہ دوست بنانے کے ساتھ نئے اسکول کا بہتر انداز میں سامنہ کر سکے۔
8۔گھریلو معاملات میں اس کی رائے لیجئے
اگر آپ گھر کے معاملات میں بچے سے رائے لیتے ہیں تو وہ اپنے آپ کو بہت اہم سمجھے گا اور زیادہ ذمہ دار بن جائے گا،گھر کی سیٹنگ ہو یاکمرے کو نئے سرے سے ترتیب دے رہے ہوں، اس میں اپنے بچے کی رائے لیجئے، اور اس میں چھپے منصوبے پر غور کریں بجائے اس کے کہ اس کی غلطیاں نکالیں،اسطرح آپ کے بچے میں اعتماد پیدا ہوگا اور قوت فیصلہ میں بھی اضافہ ہوگا۔
9۔بچے کی ذاتی دلچسپیوں سے واقفیت رکھئے
بچے کی پرورش پر دھیان دینے کے ساتھ  ساتھ اس کی ذاتی پسند نا پسند سے بھی واقفیت ضروری ہے،اپنے بچے سے اس کے پسندیدہ مضمون،پسندیدہ کھیل اور ٹی وی پروگرام کے بارے میں بات کیجئے،اس طرح آپ کو اپنے بچے کو سمجھنے میں آسانی ہوگی۔
10 ۔اپنے وعدے پر قائم رہیئے
اپنے بچے سے کئے ہوئے وعدے کو پورا کرکے آپ اس کا دل جیت لیں گے،چاہے وہ ساحل سمندر پر جانے کا ہو یا سپر مارکیٹ کا،اپنے وعدے پر قائم رہئیے اس طرح آپ کے بچے میں بھی ایمانداری بڑھے گی۔
11۔اسے آزادی دیجئے
ہر وقت اپنی مرضی چلانے کے بجائے اپنے بچے کو آزادی دیجئے ،اسے اسکی پسند کے کام کرنے دیں لیکن اس کے قریب رہیں تاکہ وہ کوئی غلطی نہ کرے اور ضرورت پڑنے پر آپ اس کی رہنمائی کرسکیں۔
12۔بچے سے بزرگوں والی توقع مت رکھئے
بچے سے زیادہ امید نہ رکھیں اگر وہ غلطی کرتا ہے تو اس سے بہت کچھ سیکھے گا،اسے کسی کام سے روکنے کے بجائے احتیاط کرنا سکھائیں۔

مدیحہ غفار
الاسوہ مرکز  



آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Saturday - 2018 Dec 15