Friday - 2019 January 18
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 189414
Published : 4/9/2017 17:19

وہابی امام جماعت موساد کا رکن

لیبیا کے سلامتی اداروں نے حال ہی میں ایک سلفی رہنما کو گرفتار کیا ہے جو صہیونی خفیہ ادارے موساد کا رکن تھا۔

ولایت پورٹل:الاہرام  مصر نے ’’داعش اسرائیل کی ساخت‘‘ کے عنوان سے ایک مضمون شائع کیا ہے  جس میں ابوحفص نامی مسجد کے ایک امام کو گرفتار کیا ہے جس سے پوچھ تاچھ کے دوران معلوم ہوا کہ  اس کے پاس اسرائیل کی شہریت ہے اور وہ اسلامی ممالک میں موساد کے لیے جاسوسی کررہا ہے  نیز اس کا اصلی نام بنیامین افرائم ہے ، قابل ذکر ہے کہ یہ جاسوس داعش میں شامل ہوکر لیبیا کے شہر بنغاری میں  داخل ہوا تھا، اخبار نے مزید لکھاہے کہ ایک اندازے کے مطابق لیبیا میں دو ہزار موساد کے جاسوس سرگرم ہیں، تاہم اس کی گرفتاری سے داعش اور اسرائیل کے درمیان گہرے روابط کا پردہ بھی فاش ہوتا ہے اور یہ بھی معلوم ہوجاتا ہے کہ عراق، شام، لبنان اور لیبیا میں ہونے والے دہشتگردانہ حملوں میں اسرائیل کا  مکمل ہاتھ ہے، موساد کے باقاعدہ ملازم  اس جاسوس کا امام جماعت بن جانا لیبیا کے خفیہ ادارے کو بہت کچھ سوچنے پر مجبور کر رہا ہے ۔
امتداد




آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Friday - 2019 January 18