Tuesday - 2018 Oct. 16
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 189531
Published : 11/9/2017 16:20

اگر آج مہاتما بدھ ہوتے تو روہنگیا مسلمانوں کی مدد کو دوڑ پڑتے:دلائی لاما

میانمار سے بھاگ کر جانے والے روہنگیا مسلمانوں کے دکھ درد اتنے ہیں اگرآج خود مہاتما بدھ بھی ہوتے تو ان کی مدد کو دوڑپڑتے۔


ولایت پورٹل:تبت کے بدھ مذہبی پیشوا دلائی لاما  نے روہنگیا مسلمانوں پر ہونے والے مظالم کے خلاف پہلی بار رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہاہے کہ  جو لوگ روہنگیا مسلمانوں پر ظلم بربریت کر رہے ہیں انھیں مہاتما بدھ کو بھی یاد رکھنا چاہیے، میں سمجھتا ہوں کہ آج اگر مہاتما بدھ زندہ ہوتے تو ان کی مدد کو ضرور پہنچتے، دلائی لاما نے مزید کہا: کچھ سال پہلے نوبل انعام حاصل کرنے والے افراد کے ساتھ ہونے والی ملاقات کے دوران میں نے یہ بات میانمار حکومت کی  سربراہ  آنگ سان سوچی سے کہی تھی، انھوں نے مزید کہا:میانمار کے حالات کافی تکلیف دہ ہیں قابل ذکر ہے میانمار کے بدہشٹ مہاتما بدھ کے پیروکار تو ہیں لیکن تبتیوں سے ان کی مذہبی رسومات الگ ہیں  اور وہ دلائی لاما کو اپنا معنوی پیشوا بھی نہیں مانتے۔
Irbi.ir



آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Tuesday - 2018 Oct. 16