Saturday - 2018 Dec 15
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 189595
Published : 14/9/2017 16:47

گوشوارے کے لیے کان کاٹ دیا!!!

میانمار میں روہنگیا مسلمانوں کے خلاف دہشتگردی اور بربریت کو جاری رکھتے ہوئے گوشوارے کے لیے ایک خاتون کے کان کو کاٹ دیا گیا۔


ولایت پورٹل:آج سوشل میڈیا پر ایک تصویر بہت تیزی کے ساتھ گھوم  رہی ہے جس میں ایک روہنگیا خاتون کا کٹا ہوا کان دکھائی دے رہا ہے  تاہم اس کے بارے میں کہا جارہا ہے کہ دہشتگردوں نے  اس کے کان سے گوشوارہ اتارنے کے لیے کان ہی کو کاٹ دیا، یادرہے کہ  ان نہتے مسلمانوں کے خلاف گذشتہ کچھ ہی ہفتوں کے دوران ہونے والی یلغار کے نتیجہ میں اب تک چار ہزار سے زائد لوگ مارے جاچکے ہیں اور دو لاکھ ستر ہزار میانمار اور بنگلادیش کی سرحد پر دربدر ہورہے ہیں، قابل ذکر ہے کہ یہ روہنگیا مسلمان  ہند اور آریا نسل کے ہیں جو مغربی میانمار کی ریاست راخین میں رہ رہے ہیں جہا ن اقوام متحدہ، بین الاقوامی ذرائع ابلاغ اور انسانی حقوق کی تنظیموں کی طرف سے انھیں دنیا کی سب سے مظلوم اقلیت قرار دیا گیا ہے، ان پر ظلم اور بربریت کے پہاڑ توڑنے والے گوتم بدھ کے ماننے والے بدہشٹ کہلاتے ہیں جو ان بے چاروں کے خون کی ہولی کھیل رہے ہیں اور عالمی برادری تماشا دیکھ رہی ہے!!!
مشرق





آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Saturday - 2018 Dec 15