Wed - 2018 Dec 12
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 190518
Published : 20/11/2017 16:46

صوبہ کردستان کا ریفرنڈرم کامل طور پر لغو محسوب؛عراقی سپریم فیڈرل کورٹ کا فیصلہ

یاد رہے کہ ۲۵ ستمبر ۲۰۱۷ء کو مسعود بارزانی اور اس کے چاہنے والوں کی طرف سے کردستان کے الگ ملک بنانے کی تحریک شروع ہوئی تھی کہ جسے عراقی قوم نے قبول کرنے سے انکار کردیا تھا۔


ولایت پورٹل:اسپوٹنیک کی رپورٹ کے مطابق عراقی سپریم فیڈرل کورٹ نے  آج رسمی طور پر کردستان کے ریفرنڈم کو لغو قرار دیتے ہوئے کردستان کو عراق کا لاینفک جزء قرار دیا ہے،اور اسی طرح فیڈرل کورٹ نے کردستان کے ریفرنڈم اور اس کے تمام آثار و نتائج کو بھی غیر قانون بتاتے ہوئے انھیں لغو کردیا ہے۔
 جبکہ لندن سے شائع ہونے والے اخبار الشرق الاوسط نے کئی دن پہلے ہی کرد ذرائع کی وساطت سے یہ خبر دی تھی کہ کردستان کی حکومت فیڈرل کورٹ کے ہر فیصلہ پر سر تسلیم خم کرنے کے لئے تیار ہے۔
یاد رہے کہ ۲۵ ستمبر ۲۰۱۷ء کو مسعود بارزانی اور اس کے چاہنے والوں کی طرف سے کردستان کے الگ ملک بنانے کی تحریک شروع ہوئی تھی کہ جسے عراقی قوم نے قبول کرنے سے انکار کردیا تھا۔

مہر




آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Wed - 2018 Dec 12