Tuesday - 2018 Oct. 16
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 190557
Published : 22/11/2017 15:53

داعش کی طرح تکفیری تفکر کا خاتمہ کئے بغیر عالم اسلام کا بھلا نہیں ہوسکتا:شاہرودی

آیت اللہ شاہرودی نے کہا:کسی دہشتگرد تنظیم کا خاتمہ اہم نہیں ہے بلکہ تمام عالم اسلام کو یہ کوشش کرنی چاہیئے کہ داعشی،تکفیری و سلفی تفکر کی گردن توڑی جائے تاکہ آئندہ ہمارا خطہ اس طرح کے تشدد،فرقہ واریت اور خون خرابے سے محفوظ رہے۔


ولایت پورٹل:رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کی تشخیص مصلحت نظام کونسل کے سربراہ آیت اللہ محمود ہاشمی شاہرودی نے آج صبح محبان اہل بیت(ع) کے عالمی اجلاس کو خطاب کرتے ہوئے تکفیری و داعشی طرز تفکر پر شدید نکتہ چینی کرتے ہوئے کہا کہ:آج بین الاقوامی صہیونزم کے سامنے،مقاومت بلاک پہلے سے بہتر اور طاقتور انداز میں،خطہ میں موجود ہے۔
انہوں محبان اہل بیت(ع) کے عالمی اجلاس میں شریک دانشوروں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ:الحمد للہ آج ہمارا خطہ داعش کے ناپاک وجود سے پوری طرح پاک ہوچکا ہے لیکن ایک دہشتگرد تنظیم کا ختم ہوجانا اور اس کی جگہ دوسری تنظیم کا آجانا ،ایک خطرناک مسئلہ ہے جسے عالمی استعمار مشرق وسطی میں پیدا کرکے چھوڑ دیتا ہے،پہلے طالبان آئے جب ان کا دور ختم ہوا تو القاعدہ کو ان کی جگہ پر لاکھڑا کیا گیا،القاعدہ کا زمانہ گذرا تو داعش اور جبھۃ النصرہ جیسے دہشتگرد درندے امت اسلامی پر مسلط کردیئے گئے،لہذا کسی دہشتگرد تنظیم کا خاتمہ اہم نہیں ہے بلکہ تمام عالم اسلام کو یہ کوشش کرنی چاہیئے کہ داعشی،تکفیری و سلفی تفکر کی گردن توڑی جائے تاکہ آئندہ ہمارا خطہ اس طرح کے تشدد،فرقہ واریت اور خون خرابے سے محفوظ رہے۔

فارس نیوز



آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Tuesday - 2018 Oct. 16