Tuesday - 2018 August 14
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 190591
Published : 25/11/2017 13:35

سعودی محاصرہ بنا ہزاروں یمنی مریضوں کا قاتل

یمن میں اقوام متحدہ کے انسان دوستانہ امور کے کوآرڈینیٹر جیمی میک گولڈریک نے کہا ہے کہ سعودی عرب کے ذریعہ یمن کے ہوائی اڈوں اور بندرگاہوں کا محاصرہ فوری طور پرختم ہونا چاہیئے کیونکہ محاصرے کی وجہ سے یمن میں وبائی امراض اور قحط کا دائرہ مزید پھیلتا جارہا ہے۔


ولایت پورٹل:رپورٹ کے مطابق یمن کی وزارت صحت کی جانب سے شائع ہونے والی ایک رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ساڑھے تیرہ ہزار یمنی مریض سعودی عرب کے ذریعہ صنعا کا بین الاقوامی ہوائی اڈہ بند کردیئے جانے کی وجہ سے دم توڑچکے ہیں۔
یمن کی وزارت صحت کے عہدیداروں نے خبردار کیا ہے کہ  محاصرے کے نتیجہ میں ہسپتالوں میں دواؤں اور طبی وسائل کی قلت کی وجہ سے اب ہسپتالوں کے بند ہوجانے کا بھی خطرہ پیدا ہوگیا ہے۔
اس درمیان یمن میں اقوام متحدہ کے انسان دوستانہ امور کے کوآرڈینیٹر جیمی میک گولڈریک نے کہا ہے کہ سعودی عرب کے ذریعہ یمن کے ہوائی اڈوں اور بندرگاہوں کا محاصرہ فوری طور پرختم ہونا چاہیئے کیونکہ محاصرے کی وجہ سے یمن میں وبائی امراض اور قحط کا دائرہ مزید پھیلتا جارہا ہے۔
جبکہ بحیرہ احمر کی بندرگاہوں کے ادارے کے نائب سربراہ یحیی شرف الدین نے سعودی عرب کی طرف سے پھیلائی جانے والی اس افواہ کی تردید کی ہے کہ الحدیدہ بندرگاہ کو مال بردار بحری جہازوں کے لنگر انداز ہونے کی اجازت دے دی گئی ہے۔
انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ نے الحدیدہ بندرگاہ کے لئے مال بردار بحری جہازوں کے لنگرانداز ہونے کا حکم دیا ہے لیکن اس کے باوجود ابھی تک کوئی بھی جہاز اس بندرگاہ پر نہیں پہنچ سکا ہے۔

تی نیوز


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Tuesday - 2018 August 14