Wed - 2018 August 15
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 190612
Published : 26/11/2017 16:33

مجھ سے زیادہ کسی نے فلسطینوں کو قتل نہیں کیا:موشہ یعلون کا اعتراف

عام اسرائیلی لوگوں کی نظر میں «ایهود باراک» سابق اسرائیلی وزیر جنگ کے نام سب سے زیادہ فلسطینوں کو قتل کرنے کا رکارڈ درج ہے اور وہ اس پر فخر بھی کرتے ہیں لیکن اس کے بیان پر نکتہ چینی کرتے ہوئے موشہ یعلون نے اس کی تردید کی ہے اور اپنے کو فلسطینوں اور عربوں کا سب سے بڑا قاتل ہونے کا اعتراف کرتے ہوئے اس پر فخر بھی کررہا ہے۔


ولایت پورٹل:رپورٹ کے مطابق اسرائیل کے سابق وزیر جنگ موشہ یعلون نے اعلان کیا ہے کہ کوئی شخص بھی Knesset(یعنی صہیونی پارلیمنٹ) میں مجھ جیسا جری موجود نہیں ہے جس نے عربوں اور فلسطینوں کو مجھ سے زیادہ قتل کیا ہو۔
عام اسرائیلی لوگوں کی نظر میں «ایهود باراک» سابق اسرائیلی وزیر جنگ  کے نام سب سے زیادہ فلسطینوں کو قتل کرنے کا رکارڈ درج ہے اور وہ اس پر فخر بھی کرتے ہیں لیکن اس کے بیان پر نکتہ چینی کرتے ہوئے موشہ یعلون نے اس کی تردید کی ہے اور اپنے کو فلسطینوں اور عربوں کا سب سے بڑا قاتل ہونے کا اعتراف کرتے ہوئے اس پر فخر بھی کررہا ہے۔
یاد رہے کہ ۶ دہائیوں سے غاصب صہویونیوں  نے اسلامی سرزمین فلسطین کے ایک بڑے حصہ کو غصب کررکھا ہے اور ہر روز نہ جانے کتنے مسلمان ان کی درندگی کی بھینٹ چڑھتے ہیں جس پر دنیا کے لوگ محض تماشائی ہیں اور اب جراتیں اتنی بڑھ چکی ہیں کہ مسلمانوں کو قتل کرنے کے معاملہ میں مقابلہ آرائی تک عام وزراء میں پائی جانے لگی ہے۔

العالم


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Wed - 2018 August 15