Friday - 2018 Dec 14
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 190699
Published : 2/12/2017 19:51

مصر کی مسجد پر حملہ متحدہ عرب امارات کے اشارے پر ہوا:سعودی چینل کا انکشاف

مصری شہر،العریش کی مسجد میں جمعہ کے دن نماز پڑھنے آئے نمازیوں کی شہادت کے پیچھے متحدہ عرب امارات کا ہاتھ ہے،اس بات کا انکشاف خود سعودی ٹی وی چینل نے کیا ہے،چینل کا کہنا تھا کہ متحدہ عرب امارات، عرب ملکوں میں دہشت گرد گروہوں کی حمایت کر رہا ہے۔


ولایت پورٹل:رپورٹ کے مطابق گذشتہ دنوں سعودی عرب کے ٹی وی چینل«نبا» نے خبر دی ہے کہ مصر کے شہر،العریش کی مسجد پر نمازیوں پر حملے میں متحدہ عرب امارات کا ہاتھ تھا۔
مذکورہ سعودی ٹیلی ویژن چینل کی رپورٹ میں ماہرین کے حوالے سے کہا گیا ہے کہ متحدہ عرب امارات، مصرکے صوبہ سینا میں دہشت گرد گروہ داعش کے اقدامات کی بڑے پیمانے پر مالی مدد کر رہا ہے۔
کچھ عرصہ قبل ہی الشاہد نیوز ویب سائٹ نے لیبیا میں گرفتار کئے گئے متحدہ عرب امارات کے ایک جاسوس کے اعترافی بیان کو شائع کیا ہے جس میں اس نے کہا ہے کہ متحدہ عرب امارات صحرائے سینا میں داعش کی مالی مدد کر رہا ہے تاکہ مصری حکومت کے لئے مشکلات پیدا کرسکے۔
بعض اطلاعات کے مطابق متحدہ عرب امارات نے صحرائے سینا میں سرگرم دہشت گرد گروہ داعش کی 30 ملین ڈالر سے زائد مالی امداد کی ہے،جب کہ متحدہ عرب امارات نے صومالیہ میں ایک مسلح گروہ کو 60 ملین ڈالر، لیبیا میں مسلح گروہ جیش الاسلام کو 42 ملین اور پاکستان میں مسلح گروہوں کو ایک 120 ملین ڈالر سے زیادہ مالی امداد فراہم کی ہے۔


شفقنا




آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Friday - 2018 Dec 14