Tuesday - 2018 Dec 11
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 190738
Published : 4/12/2017 19:49

اولاد حیدر فوق بلگرامی

فوق صاحب کو تاریخ سے گہرا تعلق اور سیرت سے عشق تھا،مطالعہ و شوق کی مدد سے سیرت و سوانح حضرت رسالتمآب(ص) و احوال آئمہ اطہار(ع) پر بہت مقبول کتابیں لکھیں،جن سے فوق صاحب کی قابلیت و وسعت نظر کا اندازہ ہوتا ہے،زندگی بھر پڑھتے لکھتے رہے،چہاردہ معصومین(ع) کی سواںح عمری اور خاص کر سیرت النبی(ص) پر ان سے زیادہ ضخیم شیعہ کتابیں اردو میں موجود نہیں ہیں۔


ولایت پورٹل:خان بہادر سید اولاد حیدر فوق بلگرامی ،بڑے معزز صاحب اقتدار زمیندار آدمی تھے،علوم دین کی باقاعدہ تعلیم تو حاصل نہ کی تھی،لیکن تاریخ سے گہرا تعلق اور سیرت سے عشق تھا،مطالعہ و شوق کی مدد سے سیرت و سوانح حضرت رسالتمآب(ص) و احوال آئمہ اطہار(ع) پر بہت مقبول کتابیں لکھیں،جن سے فوق صاحب کی قابلیت و وسعت نظر کا اندازہ ہوتا ہے،زندگی بھر پڑھتے لکھتے رہے،چہاردہ معصومین(ع) کی سواںح عمری اور خاص کر سیرت النبی(ص) پر ان سے زیادہ ضخیم شیعہ کتابیں اردو میں موجود نہیں ہیں۔
فوق صاحب نے اچھی عمر پائی اور ۲۰ رمضان المبارک سن ۱۳۶۱ ہجری مطابق ۲ اکتوبر سن ۱۹۴۲ء میں جمعہ کے دن وفات پائی۔
قلمی آثار
۱۔تفسیر قرآن مجید
۲۔اسوۃ الرسول(ص)
۳۔سراج المبین
۴۔سیرت امیرالمؤمنین(ع)
۵۔سرد چمن
۶۔سیرت امام حسن(ع)
۷۔ذبح عظیم
۸۔تاریخ امام حسین(ع)
۹۔صحیفۃ العابدین
۱۰۔مآثر الباقریہ
۱۱۔آثار جعفریہ
۱۲۔علوم کاظمیہ
۱۳۔تحفہ رضویہ
۱۴۔تحفۃ المتقین
۱۵۔سیرۃ النقی(ع)
۱۶۔العسکری
۱۷۔در مقصود
۱۸۔تاریخ جدید صوبہ بہار و اڑیسہ
۱۹۔گلدستہ مؤمنین
۲۰۔قصائد مدح آئمہ(ع)  

منبع:مطلع انوار


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Tuesday - 2018 Dec 11