Wed - 2018 july 18
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 191070
Published : 22/12/2017 19:53

فلسطین میں مسلسل تیسرا جمعہ بھی یوم غضب کے طور پر منایا گیا

فلسطینی عوام نے مسلسل تیسرے جمعہ کو بھی بیت المقدس کے بارے میں امریکی صدر کے تعصب آمیز فیصلہ کے خلاف یوم غضب منایا اور مختلف شہروں میں مظاہرے کر ٹرمپ اور اس کے اتحادیوں کے پتلے پھونکے۔

ولایت پورٹل:رپورٹ کے مطابق آج فلسطین کے ہزاروں مسلمانوں  نے مسجد الاقصی میں نماز جمعہ کی ادائیگی کے بعد مشرقی بیت المقدس میں مظاہرے کئے اور اس شہر کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے کے امریکی فیصلے کی مذمت میں نعرے لگائے۔
اسی طرح فلسطین کے دوسرے شہروں غزہ ، قلقیلیا، بیت لحم اور الخلیل میں بھی بیت المقدس کے بارے میں ٹرمپ کے فیصلہ کے خلاف جم کر مظاہرے کئے گئے۔ جبکہ بیت لحم سمیت کئی علاقوں میں فلسطینیوں اور صہیونی فوجیوں کے درمیان جھڑپوں کی خبریں بھی موصول ہوئی ہیں۔ صہیونی فوجیوں نے القدس کی حمایت میں پر امن مظاہرہ کرنے والے فلسطینیوں پر آنسو گیس کا بے تحاشہ استعمال بھی کیا ہے۔فلسطینی عوام بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے کے امریکی فیصلہ کے خلاف پچھلے تین ہفتوں سے ہر جمعہ کو یوم غضب کے طور پر مناتے چلے آرہے ہیں۔ٹرمپ کی جانب سے بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے کے اعلان کے بعد غرب اردن کے مختلف علاقوں اور غزہ میں فلسطینیوں اور صہیونی فوجیوں کے درمیان مسلسل جھڑپیں ہورہی ہیں۔




آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Wed - 2018 july 18