Saturday - 2018 july 21
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 191077
Published : 23/12/2017 9:59

سی۔آئی۔اے اور متحدہ عرب امارات کی مشترکہ جاسوسی سلطنت:امریکی ذرائع ابلاغ

متحدہ عرب امارات میں ایک سی۔آئی۔اے بن رہی ہے جس میں امریکہ کی خفیہ ایجنسی سے مدد لی جارہی ہے۔

ولایت پورٹل:امریکی ذرائع ابلاغ فارن پالیسی نے خصوصی رپورٹ پیش کی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ متحدہ عرب امارات امریکی خفیہ ایجنسی سی۔آئی۔اے کے ساتھ مل کر ایک جاسوسی سلطنت بنانا چاہتا ہے جس کے لیے وہ  سی ۔آئی ۔اے کے اعلی عہدہ داروں کو پیسے دے رہا ہے، رپورٹ میں آیا ہے کہ  شہر ابوظبی میں  واقع زائد بندر پر ایک شاندار عمارت کے اندر مغربیوں کا دفتر ہے جہاں ہر سنیچر  کو سی۔آئی،ڈی کیا ہوتی ہے کے موضوع پر ایک سیمینار ہوتا ہے اور جمعرات کو  پانچ پانچ لوگوں  کی ٹیم بنا کر انھیں خفیہ معلومات اکٹھی کرنے کی تعلیم دی جاتی ہے ، اسی طرف ابوظبی کے نزدیک ہی ایک  اکیڈمی ہےجہاں  اسلحہ اور فوجی تربیت دی جاتی ہے نیز ڈرائیونگ بھی سکھائی جاتی ہے،فارن پالیسی کا کہنا ہے کہ  سی۔آئی۔اے کے افسرجو ان پروگراموں کا ایک اہم  حصہ ہیں انھوں نے ہمیں کچھ معلومات فراہم کی ہیں  جن میں ایک افسر کا کہنا ہے کہ وہاں ہمیں بہت زیادہ پیسہ دیا جاتا ہے  اتنا کہ جس سے ایک فائو سٹار ہوٹل میں آرام سے رہا جاسکتا ہے یعنی روزانہ ہزار ڈالر،کہا جاتا ہے کہ امریکی خفیہ ایجنسی کا سابق افسر Larry Sanchez اس پروگرام کا ایک اہم فرد ہےجو چھ سال تک ابوظبی کے ولی عہد کا بہت ہی خاص آدمی رہا ہے  اس کے علاوہ بھی بہت سارے مغربی خفیہ ایجنسی کے افراد اس پروگرام میں شامل ہیں  قابل ذکر ہے کہ بلیک واٹر کا بانی Eric prince بھی ااس ٹیم میں شامل ہے جو امارات میں کام کر رہی ہے  اس کے علاوہ وائٹ ہاؤس کی انسداد دہشتگردی ٹیم کے سابق سربرہ ریچرڈ کلرک  نے بھی  چھ سال تک  ولی عہد کے لیے کام کرتے ہوئے ان مرکز وں کی بنیاد ڈالی ہے، فارن پالیسی نے اپنی رپورٹ میں مزید کہا ہے کہ متحدہ عرب امارات میں ایک سی۔آئی۔اے بن رہی ہے  جس میں امریکہ کی خفیہ ایجنسی سے مدد لی جارہی ہے  اسی کے پیش نظر 2008ء میں امارات اور نیویارک پولیس کے درمیان خفیہ اطلاعات رد وبدل کرنے کے سلسلہ میں ایک معاہدہ ہواتھا جس کے بعد نیویاک پولیس نے ابوظبی ایک اپنا دفتر بھی کھولا تھا 2012ء میں امارت نے  دہشتگردی کے ساتھ مقابلہ کرنے کے لے دس لاکھ ڈالر نیویارک پولیس کو دیے تھے، قابل ذکر ہے کہ ا مریکی حکومت بھی براہ راست اماراتی حکومت کی مدد کررہی ہے تا کہ اس کو ایران جیسی سائبری تونائی مہیا کراسکے، Larry Sanchez اور امارات کی پریشانی ایک جیسی ہے اس لیے کہ وہ بھی ایران ، اخوان المسلمین اور القاعدہ کو لے ہر وقت پریشان رہتا ہے اور متحدہ عرب امارات کے حکام بھی
فارس



آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Saturday - 2018 july 21