Tuesday - 2018 April 24
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 191078
Published : 23/12/2017 11:33

صہیونیوں کے ہاتھوں مزید دو فلسطینی شہید

امریکی صدر کے متنازع اعلان کے بعد اسرائیلی فوجیوں کے ساتھ تازہ جھڑپ میں دو فلسطینی شہید ہوگئے ۔

ولایت پورٹل:اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں ٹرمپ کے فیصلے کو کثرت رائے سے مسترد کیے جانے کے بعد اسرائیل کی جانب سے فلسطینیوں کے خلاف کارروائیوں کا نیا سلسلہ شروع کردیا گیا ہے،غزہ کی پٹی کی وزارت صحت کے ترجمان اشرف الکدرا کا کہنا تھا کہ اسرائیلی سرحد کے قریب فوج کے ساتھ تصادم کے دوران ایک 24 سالہ اور دوسرے 29 سالہ فلسطینی کو فائرنگ کا نشانہ بنایا گیا جس کے نتیجے میں وہ شہید ہوگئے جبکہ ایک 45 سالہ شخص زخمی ہوگیا،یاد رہے کہ امریکی صدر کی جانب سے 6 دسمبر کو کیے گئے فیصلے کے بعد سے ہونے والے احتجاج کے دوران اب تک 10 فلسطینی شہید اور درجنوں زخمی ہوچکے ہیں،فلسطین کے دوسرے حصے بیت اللیحم میں بھی کئی فلسطینیوں نے ٹرمپ مخالف بینرز اٹھا کر احتجاج کیا اور ٹرمپ کو مخاطب کرتے ہوئےنعرے لگائے کہ 'یہ تمہاری زمین نہیں ہے کہ فیصلے کرو، یروشلم ہمارا ہے اور اس کا تعلق ہم سے ہے اور یروشلم ہی فلسطین کا دارالحکومت ہے،ادھر فرانس کے دورے میں موجود صدر محمود عباس نے فرانس سمیت یورپ کو خطے میں امن کی کوششوں کو مزید تیز کرنے پر زور دیتے ہوئے کہا کہ مشرق وسطیٰ کے امن کے لیے امریکا کا کوئی کردار نہیں رہا کیونکہ یروشلم کے حوالے سے ٹرمپ انتظامیہ کا فیصلہ جانبدارانہ ہے،یاد رہے کہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے 14 اراکین کی جانب سے اس فیصلے کو مسترد کیے جانے کے بعد ایک روز قبل جنرل اسمبلی میں بھی دو تہائی اکثریت سے امریکی فیصلے کو مسترد کردیا گیا تھا،سلامتی کونسل میں 14 اراکین نے ٹرمپ کے فیصلے کی مخالفت کی تھی تاہم امریکا کی جانب سے اس کو ویٹو کیا گیا تھا۔
تسنیم



آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Tuesday - 2018 April 24