Thursday - 2018 Sep 20
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 191083
Published : 23/12/2017 16:38

اہل سنت کی کتابوں میں امام جعفر صادق(ع) کا تذکرہ(1)

اہل سنت کے بہت بڑے عالم و عارف شیخ عطار امام صادق(ع) کے متعلق رقمطراز ہیں کہ:چونکہ ہم صادق(امام جعفر صادق (ع) ۔ کا تذکرہ کررہے ہیں لہذا یہ سب کی طرف سے کافی ہوگا،کیا آپ نہیں دیکھتے کہ جو قوم آپ کے مذہب پر عمل پیرا ہے وہ در حقیقت بارہ اماموں کے مذہب کی پیرو ہے اور اگر میں صرف یہ عبارت لکھ دوں تو شاید سب میرے کلام سے متفق ہوجائیں:آپ کی ذات والا صفات تمام علوم و اشارات میں حد کمال کو پہونچی ہوئی ، آپ مشائخ عالم کے لئے نمونہ،سبھی کا اعتماد آپ کی ذات والاصفات،،آپ اہل ذوق کے پیشوا اور اہل عشق کے رہبر ہیں۔


ولایت پورٹل: عالم اسلام میں 5 فقہی مکاتب:حنفی،شافعی،حنبلی،مالکی اور جعفری پائے جاتے ہیں،مذہب جعفری امام جعفر صادق(ع) سے منسوب ہے کہ جو اہل بیت رسول(ص) میں سے چھٹے امام ہیں۔ آپ کی کنیت ابو عبداللہ،اور آپ کے والد ماجد کا اسم شریف حضرت امام محمد باقر(ع) ہے چنانچہ بخاری اپنی تاریخ حضرت کی ولادت باسعادت کے متعلق رقمطراز ہیں:جعفر ابن محمد نے سن 80 ہجری کو ولادت اور 148 ہجری میں وفات پائی۔ (نووی،ص 155)۔
قارئین کرام اس مختصر مقالہ کا مقصد،امام جعفر صادق(ع) کے بارے میں علمائے اہل سنت کی نظر اور ان کے نزدیک حضرت کے مقام و مرتبہ کا تذکرہ ہے،نیز یہ بھی ذہن نشین رہے کہ اہل سنت علماء اور دانشوروں کا امام صادق(ع) کے بارے میں نظریہ خود انھیں لوگوں کی فکروں کا عکاس ہے کہ جو امام صادق(ع) کے سامنے زانوئے تلمذ تہہ کرتے تھے چنانچہ اگر اہل سنت کی معتبر کتابوں کا مطالعہ کیا جائے تو ان میں حضرت کے بہت سے صفات کا تذکرہ ملتا ہے لیکن ہم اس مقالہ میں ان میں سے صرف اہم کے تذکرہ پر ہی اکتفاء کریں گے۔
امام صادق(ع) کے صفات
اہل سنت کی بہت سی معتبر کتابوں میں اہل بیت(ع) کے فضائل کے تذکرہ ملتا ہے،لیکن امام جعفر صادق(ع) کو متعدد عناوین اور آپ کی بزرگی کا خصوصی طور پر ملاحظہ کیا جاسکتا ہے کہ جو آپ کے حسب و نسب کی بزرگی اور معنوی اور علمی مرتبہ پر دلالت کرتے ہیں
چنانچہ ابن عبد البر آپ کی تعریف میں اس طرح گویا ہیں:جعفر بن محمد بن علی بن ابی طالب رضی الله عنهم ،آپ کی کنیت ابو عبداللہ اور آپ کی والدہ گرامی فروہ بنت قاسم ابن محمد بن ابی بکر ہیں،اور آپ وہی جعفر ہیں کہ جو صادق کے نام سے معروف ہیں،آپ ثقہ،امین،عاقل،حکیم،بہت باتقویٰ اور صاحب فضل شخصیت کے مالک تھے،اور مذہب جعفری آپ ہی کی طرف منسوب ہے۔( یوسف بن عبدالله، 1387ق، ص 66)۔
شیخ عطار نے عرفاء اور اولیاء کے بارے میں ایک کتاب لکھی ہے جس کا نام ہے«تذکرۃ الاولیاء»۔ وہ اس کتاب میں امام صادق(ع) کا تذکرہ کرتے ہوئے تحریر کرتے ہیں:آپ ملت مصطفٰی کے سلطان،حجت نبوی کی برہان،عامل صدیق،عالم با تحقیق،شجر ولایت کے ثمر،جگر گوشہ انبیاء،وارث علی و نبی،عارف عاشق،جعفر صادق ہیں۔
نیز وہ اپنی کتاب میں رقم کرتے ہیں کہ انبیاء، اہل بیت(ع) اور صحابہ  کے تذکرہ کے لئے مستقل تحریر کی ضرورت ہے لیکن چونکہ میری یہ کتاب اولیاء کرام کے احوال سے متعلق ہے لہذا ہم بطور تبرک نام نامی امام جعفر صادق(ع) سے اپنی کتاب کا آغاز کررہے ہیں۔
اور پھر اپنی تحریر کو آگے بڑھاتے ہوئے کہتے ہیں:کہ چونکہ ہم صادق(امام جعفر صادق (ع) ۔ کا تذکرہ کررہے ہیں لہذا یہ سب کی طرف سے کافی ہوگا،کیا آپ نہیں دیکھتے کہ جو قوم آپ کے مذہب پر عمل پیرا ہے وہ در حقیقت بارہ اماموں کے مذہب کی پیرو ہے اور اگر میں صرف یہ عبارت لکھ دوں تو شاید سب میرے کلام سے متفق ہوجائیں:آپ کی ذات والا صفات تمام علوم و اشارات میں حد کمال کو پہونچی ہوئی ، آپ مشائخ عالم کے لئے نمونہ،سبھی کا اعتماد آپ کی ذات والاصفات،،آپ اہل ذوق کے پیشوا اور اہل عشق کے رہبر ہیں۔
اور بڑے وقیع انداز میں حضرت کی مدح و ثنا کرنے کے بعد یہ شعر لکھتے ہیں:
لو کان رفضا حب آل محمد
فلیشهد الثقلان انی رافض
ترجمہ:اگر آل محمد(ص) سے محبت کرنا رفض ہے تو ائے دونوں عالم کے باشندوں! آؤ اور یہ گواہی دو کہ میں رافضی ہوں۔(عطار، 1384ش، ص 10)
لہذا مذکورہ بالا بیان کی روشنی میں واضح ہوجاتا ہے کہ جو شخص بھی یہ گمان کرتا ہے کہ اہل سنت والجماعت اہل بیت(ع) کے علمی اور معنوی مقام کے متعلق عقیدہ نہیں رکھتے وہ حقیقت میں آشکارا تہمت کا مرتکب ہوا ہے چونکہ ان حضرات نے اہل بیت(ع) کے متعلق اپنی کتابوں میں رسول خدا(ص) سے جو احادیث نقل کی ہیں ان سے پتہ چلتا ہے کہ اہل سنت، اہل بیت(ع) سے کتنی محبت رکھتے ہیں چنانچہ ابن حبان بستی اپنی صحیح میں رسول خدا(ص) سے یہ حدیث نقل کرتے ہیں: میں اس ذات کی قسم کھاتا ہوں کہ جس کے قبضہ قدرت میں میری جان ہے کہ میرے اہل بیت سے کوئی شخص بھی دشمنی نہیں کرے گا مگر یہ کہ خداوند عالم اسے جہنم میں ڈال دے گا۔(بستی، 1414ق، ص 435، حدیث 2578)۔

جاری ہے ۔۔۔۔۔۔۔



آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Thursday - 2018 Sep 20