Wed - 2018 Dec 12
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 191581
Published : 17/1/2018 10:4

چنگیز وقت کا ہندوستان آنا مسلمانوں کے زخموں پر نمک چھڑکنا ہے:مولانا عباس انصاری

مولانا انصاری نے کہا نتن یاہو نے چنگیز خان کی روایت اپناتے ہوئے لاکھوں فلسطینیوں کو یا تو بے دردی سے شہید کیا یا پھر قیدخانوں میں بند رکھا ہے۔


ولایت پورٹل: جموں و کشمیر اتحاد المسلمین تنظیم کے سرپرست اعلٰی اور سینئیر حریت رہنما مولانا محمد عباس انصاری نے کہا کہ چنگیز وقت نتن یاہو کی ہندوستان آمد اس بات کی واضح دلیل ہے کہ دونوں ممالک مسلمانوں کے سخت ترین دشمن ہیں،انہوں نے کہا کہ نتن یاہو کی ہندوستان آمد مسلمانوں کے زخموں پر نمک پاشی کے برابر ہے۔ مولانا انصاری نے کہا اسرائیل ایک غاصب ریاست ہے اور مسلمانان عالم کسی بھی صورت میں اس کو ملک تسلیم نہیں کرسکتے ہیں،مولانا انصاری نے کہا نتن یاہو نے چنگیز خان کی روایت اپناتے ہوئے لاکھوں فلسطینیوں کو یا تو بے دردی سے شہید کیا یا پھر قیدخانوں میں بند رکھا انہوں نے کہا کہ ہندوستان اسرائیل کا دوست ہے جو اس بات کا کھلم کھلا اعلان ہے کہ دونوں ممالک مسلمانوں کے مخالف ہیں، مولانا نے ہندوستانی فوجی سربراہ راوت کے حالیہ بیان پر سخت تشویش کا اظہار کرتےہوئے کہا کہ فوجی سربراہ کا کشمیر مخالف بیان ناقابل برداشت ہے جس پر اقوام عالم کی خاموشی افسوسناک عمل ہے،مولانا انصاری نے کہا کہ ہندوستان اسرائیل کے کہنے پر مسلمانوں کے مدرسوں اسکولوں اور مسجدوں کو بند کرنے کی ناکام کوششیں کررہے ہیں،انہوں نے کہا کہ اس حوالے سے کئی نام نہاد اور مفاد پرست مسلمان ان کے تصاویر میں رنگ بھر رہے ہیں جو قابل افسوس ہے،مولانا نے کہا کہ مسلمانوں کے مدرسوں اسکولوں اور مسجدوں میں کسی کی دخل اندازی کو برداشت نہیں کیا جائے گا اور نہ ہی کسی کو اس پر سیاست کرنے کی اجازت دی جائے گی۔
سحر



آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Wed - 2018 Dec 12