Friday - 2018 مئی 25
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 191593
Published : 17/1/2018 19:33

کیا بنگلہ دیش اور میانمار کے درمیان معاہدہ کے بعد روہنگیا مسلمان اپنے گھر واپس جا سکیں گے؟

بنگلہ دیش اور میانمار کے درمیان روہنگیا مہاجرین کی وطن واپسی کے معاہدے پر دوسال میں عمل درآمد کا وقت مقرر ہوچکا ہے۔
ولایت پورٹل: بنگلہ دیش اور میانمار کے درمیان روہنگیا مہاجرین کی وطن واپسی کے معاہدے پر دوسال میں عمل درآمد کا ٹائم فریم طئے پاگیا ہے۔ اطلاعات کے مطابق بنگلہ دیش اور میانمار کے وفد نے روہنگیا بحران کے حوالہ سے مذاکرات کئے جس میں تمام تر پہلؤوں کا جائزہ لینے کے بعد میانمار حکومت مہاجرین کو واپس لینے پر رضامند ہوگئی ہے۔ دونوں ممالک نے اس امر پر اتفاق کیا کہ مہاجرین کی واپسی 2 سال کے عرصہ میں مکمل ہوگی۔
اطلاعات کے مطابق میانمار حکومت نے وطن لوٹنے والوں کو ابتداء میں رہائش فراہم کرنے اور بعد از آں انہیں ان کے اصلی گھروں میں منتقل کرنے کی یقین دہانی کرائی ہے تاہم روہنگیائی مسلمانوں کو شہریت دینے کے معاملہ میں کوئی پیش رفت نہیں ہوئی ہے۔





آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Friday - 2018 مئی 25