Monday - 2018 Oct. 22
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 191628
Published : 20/1/2018 17:7

موساد کے ہاتھوں ابھی تک ۳ ہزار لوگ مارے جاچکے ہیں: موساد کا موجودہ رکن

برگمان موساد کا ایک فعال رکن ہے جس نے ملک اور بیرون ملک بھی اسرائیلی مفادات کی خاطر بڑے بڑے آپرشنز میں حصہ لیا ہے کہ جس کے ہاتھوں نہ جانے کتنے بے گناہ فلسطینی و غیر فلسطینی مسلمان ہلاک ہوئے ہیں اس نے موساد کی کارکردگی اور فعالیت پر حال ہی میں ایک کتاب بھی لکھی ہے۔

ولایت پورٹل: رپورٹ کے مطابق اسرائیل کی خفیہ ایجنسی موساد کے لئے کام کرنے والے ایک فعال رکن «رونن برگمان» نے جرمنی کے ایک معروف میگزین «اشپیگل» کو دیئے انٹریو میں کہا کہ آج تک ہماری تنظیم کے ہاتھوں جتنے لوگ مرے ہیں وہ سب ہماری فہرست میں داخل نہیں تھے بلکہ ہماری نظر میں بہت سے تو مجرم بھی نہیں تھے اور انھیں قتل کرنے میں اشتباہ ہوا ہے۔
برگمان نے کہا کہ فقط فلسطینوں کے دوسرے انتفاضہ میں تقریباً ۴ ،۵ افراد ہر روز  ہمارے منظور نظر لوگوں کو قتل کیا جاتا تھا اور ہمارا ٹارگیٹ صرف حماس سے مربوط افراد تھے۔
یاد رہے کہ یہ شخص موساد کا ایک فعال رکن ہے جس نے ملک اور بیرون ملک بھی اسرائیلی مفادات کی خاطر بڑے بڑے آپرشنز میں حصہ لیا ہے کہ جس کے ہاتھوں نہ جانے کتنے بے گناہ فلسطینی و غیر فلسطینی مسلمان ہلاک ہوئے ہیں اس نے موساد کی کارکردگی اور فعالیت پر حال ہی میں ایک کتاب بھی لکھی ہے جس میں اس نے  1000 ہزار لوگوں کے انٹریوز کا خلاصہ بیان کیا ہے کہ جن میں  6 موساد کے سابق اراکین اور 6 وزراء کہ جن میں غاصب اسرائیل کا موجودہ فاسق وزیر اعظم نتنیاہو بھی شامل ہے۔

العالم


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2018 Oct. 22