Thursday - 2018 Sep 20
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 191705
Published : 24/1/2018 6:5

ایران،حزب اللہ اور حماس کا بڑھتا تعاون؛اسرائیل کے لیے خطرے کی گھنٹی:صیہونی تجزیہ نگار

قدس مرکز برائے پبلک اور گورنمنٹنے اسرائیلی مصنف یونی بن مناحیم کی ایک تحریر شائع کی ہے، جس میں کہا گیا ہے کہ حماس لبنان میں اسرائیل کے خلاف ایک نیا محاذ کھول رہی ہے۔


ولایت پورٹل:العهد نیوز نے لکھا ہے: یہ سلسلہ سال 2000 کے بعد ایرانی جنرل سلیمانی سے متاثر ہونے کے بعد شروع ہوا ہے، حماس نے غزہ اور مغربی کنارے میں اسرائیل کے خلاف مزاحمت کر کے اسرائیل کے لیے نیا محاذ قائم کر دیا تھا،بن مناحیم نے الزام عائد کیا ہے کہ حماس نے لبنان میں فلسطینی کیمپوں میں اپنے آپ کو مضبوط کیا ہے اور ایران سے ملنے والی مدد کو اس کام پر خرچ کیا ہے، اس کے علاوہ حماس کے سربراہ کے ایران سے اچھے تعلقات ہیں، اور وہ مکمل طور پر سپاہ پاسداران انقلاب اسلامی کا ساتھ دے رہے ہیں،انہوں نے کہا: حماس لبنان میں فلسطینی کیمپوں کو اسرائیل کے خلاف جنگ اور اس پر میزائل فائر کرنے کے لیے تیار کر رہی ہے اور وہاں سے افراد کو اسرائیل میں آپریشن کے لیے منتقل کرے گی، اسرائیل کو اس کے لیے اقدامات کرنے چاہئے،انہوں نے کہا: اگر لبنان میں حماس کے رکن محمد حمدان کو اسرائیل نے قتل کروانے کی کوشش کی ہے تو یہ حماس کو ایک نیا محاذ کھولنے سے روکنے کے لیے ایک دھمکی تھی،یاد رہے کہ پچھلے ہفتے موساد نے حماس کے رکن محمد حمدان کی گاڑی کے نیچے بم نصب کیا تھا پر وہ بال بال بچ گئے تھے۔
Iuvmpress




آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Thursday - 2018 Sep 20