Friday - 2019 January 18
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 191753
Published : 27/1/2018 8:22

اوروں کو نصیحت، خود کو فضیحت!

تسلط پسند پالیسی کا حامل ملک امریکہ جہاں اپنے مخالف ممالک پر کسی بھی قسم کے دفاعی صلاحیت حاصل کرنے کی صورت میں پابندیاں عائد کرتا ہے وہیں اپنے دوست ممالک کو بھاری اسلحہ فراہم کرنے کے ساتھ ساتھ اپنی عسکری طاقت میں اضافہ کرنے کی بھرپور کوششیں کررہا ہے۔

ولایت پورٹل:امریکی وزارت دفاع پینٹاگون مستقبل قریب میں نئے میزائل سسٹم آزمانے کا ارادہ رکھتا ہے،اس پروجیکٹ کے سربراہ ایمی کوہن نے کہا ہے کہ یہ میزائل آزمائش کے آخری مراحل میں ہے،ایک امریکی نیوز چینل نے کہا ہے کہ پینٹاگون روس، ایران اور کچھ دوسرے ممالک کے میزائل حملوں سے مقابلے کے لیے جدید ٹیکنالوجی لا رہا ہے،پینٹاگون جلد ہی ایس ایم 3 نامی ڈیفینس سسٹم کو پورپ میں نصب کرے گا، تاکہ ایران اور روس کے میزائل حملوں کے مقابلے میں اپنا دفاع کرسکے،نیشنل انٹرسٹ کے مطابق ایس ایم 3 دور تک اپنے ہدف کو نشانہ بنا سکتا ہے کہ یہ میزائل امریکہ اور جاپان کے دفاعی اداروں نے مل کر بنایا ہے، جس میں اجیس راڈار کی ٹیکنالوجی کو استعمال کیا گیا ہے،اس پروجیکٹ کے سربراہ ایمی کوہن نے کہا ہے کہ یہ میزائل آزمائش کے آخری مراحل میں ہے،اس میزائل کو ہوا اور سمندر دونوں میں تجربہ کیا جائے گا، اس میزائل کے دوسرے نمونے رومانیہ اور پولینڈ کے فوجی اڈوں میں نصب ہیں،امریکی سیکورٹی پالیسی میں بھی امریکہ نے اپنے رقیبوں کا ذکر کیا ہے، اور ایران کے ذکر سے معلوم ہوتا ہے کہ امریکہ ایران کو علاقائی طاقت سمجھتا ہے،اس پالیسی میں ایران پر ایٹمی ہتھیار حاصل کرنے کا الزام عائد کیا گیا ہے، اور اپنے مفادات حاصل کرنے کے لیے ایران کا خوف ایجاد کیا جا رہا ہے۔
تسنیم



آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Friday - 2019 January 18