Tuesday - 2018 Dec 11
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 192245
Published : 25/2/2018 4:54

داعش کےخلاف تین سالہ جنگ میں غلطی سے ہمارے ہاتھوں841 عام شہری مارے گئے ہیں: داعش کے خلاف بننے والے امریکی اتحاد کا اعلان

امریکی سربراہی میں کام کرنے والی داعش کے خلاف نام نہاد اتحاد نے اعلان کیا ہے کہ عراق اور شام میں داعش کے خلاف جنگ کے دوران غلطی سے 841 عام شہری مارے گئے ہیں۔


ولایت پورٹل:النشرہ نیوز کی رپورٹ کے مطابق داعش کے خلاف نام نہاد امریکی جنگ میں حال ہی میں مزید 12 عام شہری جاں بحق ہوئے ہیں اور تین سالہ جنگ میں اب تک کل 841 عام شہری امریکی حملوں میں لقمہ اجل بن گئے ہیں،امریکی سربراہی میں کام کرنے والی داعش کے خلاف نام نہاد اتحاد نے اعلان کیا ہے کہ عراق اور شام میں داعش کے خلاف جنگ کے دوران غلطی سے 841 عام شہری مارے گئے ہیں،واضح رہے کہ امریکہ اور اس کے اتحادی 2014 سے عراق اور شام کے مختلف علاقوں میں دہشت گردوں کے خلاف جنگ کے بہانے عام شہریوں کو ہی نشانہ بنا رہے ہیں،شامی خبررساں ادارے سانا کے مطابق گزشتہ جمعرات کو امریکی اتحادی افواج نے دیرالزور کے علاقے ''ھجین'' میں رہائشی مکانات پر بمباری کی جس کے نتیجے میں کم ازکم 12 عام شہری جاں بحق ہوئے،خیال رہے کہ عراقی اور شامی حکام امریکی اتحادی فوج پر الزامات عائد کرتے رہے ہیں کہ وہ داعش کے بجائے عام شہری اور سیکیورٹی فورسز کو نشانہ بنا رہے ہیں۔
تسنیم




آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Tuesday - 2018 Dec 11