Tuesday - 2018 Dec 11
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 192246
Published : 25/2/2018 5:11

اسلامی حکومت کی دعویدار خاندانی آمریت کی تیس ہزار لوگوں کی نماز جمعہ پر پابندی

آل خلیفہ کی نام نہاد مسلمان حکومت کی پابندیوں کے سبب بحرین کی 30 ہزار آبادی جون2016 سے اب تک نماز جمعہ سے محروم ہے۔


ولایت پورٹل:بحرینی عوام کی انسانی حقوق اور مذہبی آزادیوں پر پابندیوں کا تسلسل جاری ہے، جون2016سے اب تک الدراز شہر کی مرکزی مسجد امام الصادق میں نماز جمعہ پر پابندی بدستور جاری رکھ کر30ہزار سے زائد آبادی کی مذہبی آزادی کو سلب کر رکھا ہے،اللؤلؤة ٹی وی کے مطابق اس جمعہ کو بھی مسجد امام الصادق (ع) کا محاصرہ کر کے نمازی مسجد تک رسائی سے محروم کر دیئے گئے،بکتر بند گاریوں سے مسلح سیکورٹی اہلکاروں نے مسجد جانے کے راستے میں ناکہ بندیاں کئے رکھیں۔ شیخ عیسیٰ قاسم کی شہریت منسوخی کے جون 2016کے فیصلے سے لے کر اب تک الدراز شہر کا محاصرہ جاری ہے جس کی وجہ سے عام شہری دو سال سے کربناک صورتحال اور تکلیف دہ زندگی گزارنے پر مجبور ہو چکے ہیں،عالمی سطح پر اس حکومتی اقدام کی کئی بار مذمت کے باوجود اصلاح کی کوئی صورت حال نظر نہیں آ رہی اور آل خلیفہ حکمرانوں کے کانوںپر جوں  تک نہیں رینگی۔
تسنیم





آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Tuesday - 2018 Dec 11