Wed - 2018 july 18
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 192262
Published : 25/2/2018 19:2

علامہ سید علی خان مدنی

علامہ سید علی خان نے مدینہ ہی میں تعلیم و تربیت حاصل کرکے ہوش مند ہوئے۔ سولہ برس کی عمر ہوئی تو اپنے والد کی خدمت میں حاضر ہوئے حیدر آباد پہنچے کی تاریخ جمعہ ۲۲ ربیع الاول سن ۱۰۶۸ ہجری ہے۔ علامہ محمد بن علی بن محمود شامی عاملی سے تلمذ کیا اور شیخ جعفر بن کمال بحرانی سے سلسلہ روایت لیا۔
ولایت پورٹل: دکن کے علماء میں مولانا صدر الدین علی بن نظام الدین احمد حسینی تاریخ و ادب کے مشہور عالم ہیں ان کے والد ملا نطام الدین(متوفٰی ۱۰۸۸ ہجری) حیدرآباد کے اکابر اور سلطان عبداللہ قطب شاہ کے داماد تھے۔ ملا احمد کی زوجہ اولٰی کے فرزند سید علی مدینہ منورہ میں پیدا ہوئے۔ تاریخ پیدائش شب شنبہ  ۱۵ جمادی الاولیٰ ۱۰۵۲ ہجری ہے۔ اور مولد مدینہ منورہ ہے۔
آپ نے وہیں تعلیم و تربیت حاصل کرکے ہوش مند ہوئے۔ سولہ برس کی عمر ہوئی تو اپنے والد کی خدمت میں حاضر ہوئے حیدر آباد پہنچے کی تاریخ جمعہ ۲۲ ربیع الاول سن ۱۰۶۸ ہجری ہے۔ علامہ محمد بن علی بن محمود شامی عاملی سے تلمذ کیا اور شیخ جعفر بن کمال بحرانی سے سلسلہ روایت لیا۔
بیس برس تک والد کے ساتھ رہ کر علم و عمل عز و اقبال کا کمال دیکھا۔ ۱۰۸۸ ہجری میں والد نے انتقال کیا تو ان کے خالو سلطان ابوالحسن سے اختلاف ہوگیا سلطان ابوالحسن والی گولکنڈہ نے ان کی املاک کو ضبط کر لیا سید علی خان مدنی حیدرآباد سے اورنگ زیب کے پاس برہان پور آگئے اورنگ زیب نے ۱۵۰۰ فوجیوں کا سپہ سالار مقرر کردیا۔ لیکن پھر عہدے سے استعفٰی دیکر حرمین زیارت کے لئے چلے گئے اور پھر وہاں سے عتبات عالیات عراق کی زیارات سے مشرف ہوکر مشہد مقدس پہونچے اور پھر اصفہان تشریف لے گئے۔ چنانچہ سلطان حسین صفعی نے ان کی کما حقہ پزیرائی نہ کی تو اپنے وطن اجداد شیراز آکر مقیم ہوگئے۔
شیراز میں سید علی خان کے جد استاد البشر غوث الحکماء امیر غیاث الدین منصور کا مدرسہ منصوریہ تھا اسی مدرسہ میں درس و تدریس کا سلسلہ شروع کیا اور شیراز ہی میں رحلت کی تاریخ وفات ذی القعدہ ۱۱۲۰ ہجری ہے شیراز کے مزار شاہ چراغ میں اپنے پردادا امیر غیاث الدین کے پہلو میں قبر پائی۔
قلمی خدمات
۱۔سلافۃ العصر فی محاسن الشعراء بکل مصر
۲۔تذکرۃ شعراء العرب
۳۔ریاض السالکین شرح صحیفۃ سید الساجدین
۴۔حدائق الندیہ شرح فوائد الصمدیہ
۵۔انوار الربیع فی انواع البدیع
۶۔سلوۃ الغریب در غرائب بحار و عجائب جزائر
۷۔الکلم الطیب والغیث الصیب
۸۔الدرجات الرفیعۃ
۹۔توضیح احادیث حمسہ مسلسلۃ
۱۰۔حاشیہ قاموس
۱۱۔دیوان شعر عربی



آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Wed - 2018 july 18