Saturday - 2018 Sep 22
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 192295
Published : 27/2/2018 6:11

ایک بار پھر امریکہ اور برطانیہ کو سلامتی کونسل میں ذلت کا سامنا؛ایران کا کچھ نہیں بگاڑ سکے

یمن کی جنگ کے سلسلہ میں ایران کے خلاف سلامتی کونسل میں پیش ہونے والی قرادر کو روس نے ویٹو کر دیا۔

359.jpg
ولایت پورٹل: العالم کی رپورٹ کے مطابق اقوام متحدہ میں روس کے مندوب نے یمن کی جنگ میں ایران کے خلاف لگائے جانے والے الزامات کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ یمن کے بحران کو سیاسی ہتھکنڈے کے طور پر استعمال نہیں کرنا چاہیے اور اس کو دوسرے موضوعات میں  نہیں داخل کرنا چاہیے نیز بغیر کسی ٹھوس ثبوت کے الزام لگانا قابل قبول نہیں ہے ، چین نے نمائندہ نے بھی کہا کہ :یمن میں امن کے قیام کے لیے صرف سیاسی راستہ ہی اختیار کرنا چاہیے، ادھر اقوام متحدہ میں امریکی نمائندہ نے کہا کہ:آج سفارتکاری کوزبردست شکست ہوئی ہے! اس نے مزید کہا کہ جب تک ایران نہیں رکے گا ہم بھی نہیں رکیں گے،ایران نے میزائل اور ڈرون کی فروخت کرکے اقوام متحدہ کی قرارداد کی مخالفت کی ہے ، قابل ذکر ہے کہ امریکی نمائندہ نیکی ہیلی کو شاید معلوم تھا کہ روس اس قرارداد کو ویٹو کردے گا اس لیے وہ اس نشست میں آئی ہی نہیں ،اس کے علاوہ برطانیہ کے نمائندہ نے بھی کہا ہے کہ ایران کی سرگرمیاں ہمارے لیے برداشت کے قابل نہیں ہیں۔




آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Saturday - 2018 Sep 22